Thursday , September 20 2018
Home / کھیل کی خبریں / آسٹریلیا کے خلاف پہلے ٹسٹ میں پاکستان 221 رنوں سے فاتح

آسٹریلیا کے خلاف پہلے ٹسٹ میں پاکستان 221 رنوں سے فاتح

دوبئی 26 اکٹوبر ( سیاست ڈاٹ کام ) پاکستان نے شاندار مظاہرہ کرتے ہوئے طاقتور سمجھی جانے والی آسٹریلیا کے خلاف پہلے ٹسٹ میں 221 رنوں کے واضح فرق کے ساتھ کامیابی حاصل کرلی اور دو ٹسٹ میچس کی سیریز میں وہ 1 - 0 سے آگے ہوگئی ہے ۔ پاکستان کے بولرس نے اس کی کامیابی میں اہم رول ادا کیا ۔ خاص طور پر اسپنر ذوالفقار بابر نے دوسری اننگز میں بہترین بولن

دوبئی 26 اکٹوبر ( سیاست ڈاٹ کام ) پاکستان نے شاندار مظاہرہ کرتے ہوئے طاقتور سمجھی جانے والی آسٹریلیا کے خلاف پہلے ٹسٹ میں 221 رنوں کے واضح فرق کے ساتھ کامیابی حاصل کرلی اور دو ٹسٹ میچس کی سیریز میں وہ 1 – 0 سے آگے ہوگئی ہے ۔ پاکستان کے بولرس نے اس کی کامیابی میں اہم رول ادا کیا ۔ خاص طور پر اسپنر ذوالفقار بابر نے دوسری اننگز میں بہترین بولنگ کرتے ہوئے پانچ وکٹس حاصل کئے اور اپنی ٹیم کی کامیابی کو یقینی بنایا ۔ حالانکہ آٹھویں وکٹ کی رفاقت میں اسٹیون اسمتھ اور مچل جانسن نے پورے ایک سیشن تک پاکستانی بولرس کا ڈٹ کر مقابلہ کیا اور وکٹ نہیں گنوائی لیکن چائے کے وقفہ کے بعد وہ اپنی توجہ برقرار نہیں رکھے سکے اور جلدی جلدی آوٹ ہوگئے اس طرح پاکستان کو آسٹریلیا کے خلاف ایک طویل عرصہ کے بعد شاندار کامیابی حاصل ہوئی ۔ اس ٹسٹ میں پاکستان نے اپنی پہلی اننگز میں یونس خان اور سفراز احمد کی شاندار سنچریوں کی بدولت 454 رنز بنائے تھے ۔ یونس خان 106 اور سرفراز احمد 109 رنز پر آوٹ ہوئے تھے ۔ جواب میں آسٹریلیائی ٹیم اوپنر ڈیوڈ وارنر کی سنچری کے باوجود 303 پر ہی آوٹ ہوگئی تھی روجرس نے 38 اور جانسن نے 37 رنز بنائے تھے ۔ پاکستان نے اپنی دوسری اننگز محض دو وکٹس پر 286 رنز پر ڈیکلر کردی تھی ۔ اس اننگز میں بھی پاکستانی بلے بازوں احمد شہزاد اور یونس خان نے شاندار سنچریاں بنائی تھیں۔ احمد شہزاد 131 رنز بناکر آوٹ ہوئے تھے جبکہ یونس خان نے 103 ناٹ آوٹ رنز بنائے تھے ۔

اس طرح آسٹریلیائی ٹیم کو اپنی دوسری اننگز میں کامیابی حاصل کرنے کیلئے 437 رنوں کا بڑا اسکور کرنا تھا۔ کل میچ کے چوتھے دن آسٹریلیا نے 56 رنوں کے عوض اپنے چار وکٹس گنوا دئے تھے ۔ آج آخری دن کا کھیل شروع ہونے کے بعد بھی آسٹریلیائی بلے بازوں نے ناقص کارکردگی ہی دکھائی اور کوئی بھی بلے باز پاکستان کی نپی تلی اسپین گیند بازی کا ڈٹ کر مقابلہ نہیں کرسکا ۔ ایک موقع پر اس کے سات وکٹس محض 105 کے مجموعی اسکور پر گر گئے تھے تاہم اس وقت اسٹیون اسمتھ اور مچل جانسن نے آٹھویں وکٹ کی رفاقت کیلئے 65 رنز جوڑے ۔ اسمتھ اور مچل جانسن نے پاکستانی بولرس کا بہترین انداز میں مقابلہ کرتے ہوئے نصف سنچریاں اسکور کیں۔ چائے کے وقفہ کے بعد اسٹیون اسمتھ 55 کے انفرادی اسکور پر یاسر شاہ کی گیند پر اسش شفیق کو کیچ دے بیٹھے ۔ انہوں نے 175 گیندوں کا سامنا کرتے ہوئے تین چوکے لگائے تھے ۔ براڈ ہاڈن سفر کے اسکور پر ذوالفقار بابر کی گیند پر بولڈ ہوگئے ۔ مچل مارش صرف تین رن اسکور کرسکے ۔

ذوالفقار بابر نے انہیں اظہر علی کے ہاتھوں کیچ کرایا۔ مچل جانسن بھی دوسری جانب سے اپنے ساتھیوں کے آوٹ ہونے کی وجہ سے توجہ مرکوز نہیں کرپائے اور وہ 61 رن بنانے کے بعد یاسر شاہ کی گیند پر آوٹ ہوگئے ۔ سرفراز احمد نے انہیں اسٹمپ کیا جبکہ پیٹر سیڈل کو ذوالفقار بابر کی گیند پر اظہر علی نے کیچ کروایا ۔ کیفے صفر کے اسکور پر ناٹ آوٹ رہے اس طرح پاآسٹریلیائی ٹیم 216 رنوں پر آوٹ ہوگئی اور اسے 221 رنوں کے بڑے فرق سے شکست کا سامنا کرنا پڑا ۔ پاکستان کی جانب سے آسٹریلیا کی دوسری اننگز میں ذوالفقار بابر نے شاندار مظاہرہ کیا اور انہوں نے اپنے کیرئیر میں پہلی مرتبہ پانچ وکٹس حاصل کئے ۔ انہوں نے 31.1 اوورس میں 74 رنز دیتے ہوئے پانچ وکٹس حاصل کئے جبکہ دوسری جانب سے یاسر شاہ نے بہت موثر ثابت ہوئے ۔ انہوں نے 25اوورس میں 50 رنز دیتے ہوئے چار وکٹس حاصل کئے ۔ عمران خان نے ایک وکٹ حاصل کی تھی ۔ پاکستان کے سینئر بلے باز یونس خان نے اس میچ کی دونوں ہی اننگز میں سنچریاں اسکور کی تھیں اور انہیں مین آف دی میچ قرار دیا گیا ۔

TOPPOPULARRECENT