Thursday , September 20 2018
Home / Top Stories / آسیان چوٹی کانفرنس میں کل مودی ۔ ٹرمپ باہمی ملاقات متوقع

آسیان چوٹی کانفرنس میں کل مودی ۔ ٹرمپ باہمی ملاقات متوقع

وزیراعظم مودی کی آج آمد ، خطہ میں سیکوریٹی کی صورتحال پر بات چیت کا بھی امکان

منیلا ۔ 11 ۔ نومبر : ( سیاست ڈاٹ کام ) : وزیراعظم نریندر مودی اور صدر امریکہ ڈونالڈ ٹرمپ کی آسیان چوٹی کانفرنس کے موقع پر پیر کو باہمی ملاقات کی توقع ہے ۔ نریندر مودی کل یہاں پہونچیں گے اور وہ 14 نومبر کو 15 ویں آسیان ہند چوٹی کانفرنس اور 2 روزہ ایسٹ ایشیاء چوٹی کانفرنس میں شرکت کریں گے ۔ صدر امریکہ ڈونالڈ ٹرمپ بھی کل یہاں پہونچ رہے ہیں اور وہ اپنے پانچ قومی دورہ ایشیا کے حصہ کے طور پر یہاں آرہے ہیں وہ جاپان ، جنوبی کوریا ، چین ، ویتنام اور فلپائن کا دورہ کررہے ہیں ۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ مودی اور ٹرمپ کے درمیان یہ ملاقات پیر کو ہوگی ۔ یہ ان قائدین کی ہند ۔ امریکہ جاپان اور آسٹریلیا کے چار رخی اتحاد کے بعد پہلی بار ملاقات ہوگی ۔ ان ملکوں کے درمیان اتحاد کی تجویز کے بعد پہلی مرتبہ ہونے والی ملاقات میں مختلف امور پر بات چیت ہوگی ۔ جاپان نے گذشتہ ماہ اس بات کا اشارہ دیا تھا کہ وہ امریکہ ، ہندوستان اور آسٹریلیا کے ساتھ اعلیٰ سطحی مذاکرات کی تجویز رکھے گا ۔ ذرائع نے کہا کہ چار ملکوں کے عہدیدار آسیان چوٹی کانفرنس کے موقع پر ملاقات کریں گے ۔ جاپان کے اس اقدام کے جواب میں ہندوستان نے کہا تھا کہ وہ کئی مسائل پر ہم خیال ملکوں کے ساتھ کام کرنے کے لیے کھلا ذہن رکھتا ہے ۔ اس سلسلہ میں امریکہ نے کہا تھا کہ وہ بھی ہندوستان ، جاپان اور آسٹریلیا کے ساتھ چار رخی ملاقات کرتے ہوئے کام کرنے کا متمنی ہے ۔ وزیر خارجہ جاپان ٹوروکونو نے گذشتہ ماہ کہا تھا کہ ٹوکیو اس بات کا حامی ہے کہ امریکہ ، ہندوستان اور آسٹریلیا کے درمیان بات چیت کی جائے اور حکمت عملی پر مبنی شراکت داری کو مزید فروغ دیا جائے ۔ صدر ٹرمپ نے کل ہی ہندوستان کی ستائش کی تھی اور کہا تھا کہ ہندوستان میں پیداوار بڑھ رہی ہے اور وہ اپنی معیشت کو کھلا رکھ رہا ہے ۔ انہوں نے ومیراعظم نریندر مودی کی بھی ستائش کرتے ہوئے کہاتھا کہ وہ مودی کے ساتھ مل کر کامیابی سے کام کررہے ہیں تاکہ اس بڑے ملک اور اس کے عوام کو ایک دوسرے کے قریب لائیں ۔ ٹرمپ نے ’ انڈو پسیفک ‘ کی اصطلاح کا استعمال کرتے ہوئے یہ اشارہ دیا دیا تھا کہ امریکہ اب ہندوستان کے ساتھ بنیادی سطح پر کام کرتے ہوئے جاپان آسٹریلیا کو بھی اتحاد میں شامل کرے گا ۔ نریندر مودی اور ٹرمپ توقع ہے کہ اپنی ملاقات میں باہمی مفاد کے اہم مسائل پر تبادلہ خیال کریں گے ۔۔

TOPPOPULARRECENT