Thursday , May 24 2018
Home / Top Stories / آصفہ سے انصاف کا مطالبہ :چندرائن گٹہ تا چارمینار ریالی

آصفہ سے انصاف کا مطالبہ :چندرائن گٹہ تا چارمینار ریالی

پرانے شہر میں نوجوانوں کے شعور اور رضاکارانہ اقدام پر سیاسی حلقوں میں ہلچل

حیدرآباد۔18اپریل(سیاست نیوز) ملک بھر میں جاری آصفہ کیلئے انصاف کی جدوجہد میں پرانے شہر کے نوجوان بھی شامل ہو چکے ہیں اور ہزاروں کی تعداد میں نوجوانوں نے آج چندرائن گٹہ چوراہے سے تاریخی چارمینار تک عظیم الشان ریالی منظم کرتے ہوئے عصمت ریزی کا شکار متاثرین کے لئے عاجلانہ انصاف اور خاطیوں کو کیفر کردار تک پہنچانے کا مطالبہ کرتے ہوئے ملک میں خواتین کیلئے محفوظ ماحول کی فراہمی کو یقینی بنانے پر زور دیا۔ چندرائن گٹہ سے چارمینار تک نکالی گئی اس ریالی میں ہزاروں کی تعداد میں لڑکے اور لڑکیاں شامل تھے جو مرکزی حکومت اور وزیر اعظم کے خلاف نعرے لگا رہے تھے اور ان کے ہاتھوں میں پلے کارڈس موجود تھے۔ اس ریالی کی خاص بات یہ رہی کہ اس ریالی کی قیادت کسی سرکردہ شخصیت یا جماعت کے پاس نہیں تھی بلکہ رضاکارانہ طور پر نکالی گئی اس ریالی میں نوجوانوں کی بڑی تعداد نے شرکت کرتے ہوئے انصاف کے لئے جدوجہد کا درس دیا ہے۔ نوجوانوں میں پیدا ہونے والے اس شعور سے سیاسی و مذہبی حلقوں میں کھلبلی پیدا ہونے لگی ہے کیونکہ بغیر کسی اہم شخصیت اور جماعت کی تائید کے اتنی بڑی تعداد میں نوجوانوں کی ریالی میں شرکت اور عصمت ریزی کا شکارمتاثرین کے لئے آواز اٹھانے جمع ہونا نوجوان نسل میں شعور کی علامت ہے۔ نوجوانوں کی جانب سے پر امن طویل ریالی منظم کئے جانے کے بعد یہ بات واضح ہوچکی ہے کہ ملک میں انسانیت سوز واقعات کے خلاف اور حصول انصاف کیلئے جدوجہد کرنے والوں کی بڑی تعداد موجود ہے جو کہ مذہب‘ ذات پات اور سیاسی وابستگیوں سے بالاتر ہوکر جدوجہد کرنا جانتے ہیں۔ریالی کے دوران نوجوانوں کی جانب سے حکومت سے مطالبہ کیا جا رہا تھا کہ خاطیوں کے خلاف سخت کاروائی کی جائے اور خاطیوں کے خلاف عدم کاروائی کی صور ت میں احتجاج میں مزید شدت پیدا کی جائے گی۔شرکاء نے حکومت کی جانب سے عصمت ریزی کے واقعات پر کنٹرول کے لئے اقدامات نہ کئے جانے پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہہ رہے تھے کہ ملک کا مقتدر طبقہ اس طرح کے واقعات کو معمول کی بات قرار دیتے ہوئے شہریوں کو خوف میں مبتلاء کر رہا ہے اور خاطیوں کی حوصلہ افزائی کر رہا ہے۔جناب محمد سلیم نے بتایا کہ ملک میں جگہ جگہ آصفہ کیلئے احتجاج کے باوجود حکومت کی جانب سے اختیار کردہ موقف سے ایسا محسوس ہوتا ہے کہ حکومت خود خاطیوں کی پشت پناہی کر رہی ہے۔انہوں نے بتایا کہ ملک کی موجودہ صورتحال میں اب لڑکیوں کو کالج میں داخلہ کے ساتھ ساتھ انہیں اسلحہ کا لائسنس دلوانے کی ضرورت محسوس ہونے لگی ہے۔جناب سیدخورشید احمد نے بتایا کہ ملک میں لڑکیوں کے والدین ہی نہیں بلکہ ہر طبقہ خود کو غیر محفوظ محسوس کرنے لگا ہے اور دلت اور مسلمان انصاف کی امید کھوتے جا رہے ہیں ان حالات میں سیکولر قوتوں کو متحد ہوتے ہوئے ملک کی عظیم روایات کو برقرار رکھنے کے اقدامات کرنے چاہئے ۔

TOPPOPULARRECENT