Monday , December 11 2017
Home / شہر کی خبریں / آلیر فرضی انکاونٹر کی سی بی آئی تحقیقات کا مطالبہ

آلیر فرضی انکاونٹر کی سی بی آئی تحقیقات کا مطالبہ

23 اور 24 اکٹوبر کو ’ چلو دہلی ‘ ، ہیومن رائٹس آرگنائزیشن کا پروگرام
حیدرآباد ۔ 20 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز): نیشنل کانفیڈریشن آف ہیومن رائٹس آرگنائزیشن نے آلیر فرضی انکاونٹر واقعہ کی سی بی آئی کے ذریعہ تحقیقات کروانے کا مطالبہ کیا ۔ متاثرین کے افراد خاندان کو بطور ایکس گریشیا معاوضہ دلانے کے علاوہ فرضی انکاونٹر واقعہ میں ملوث پولیس ملازمین کے خلاف دفعہ 302 آئی پی سی کے تحت قتل کا مقدمہ درج کرنے پر بھی زور دیا گیا ۔ مرکزی و ریاستی حکومتوں کا انصاف کا دروازہ کھٹکھٹانے کی غرض سے جاریہ ماہ 23 اور 24 اکٹوبر کو دو روزہ ’ چلو دہلی ‘ اور ’ آندھرا و تلنگانہ بھون مارچ ‘ پروگرام منظم کرنے کا فیصلہ کیا ہے تاکہ آلیر فرضی انکاونٹر واقعہ کے پس پردہ محرکات کو منظر عام لاتے ہوئے مذکورہ واقعہ میں ملوث خاطیوں کو کیفر کردار تک پہنچایا جاسکے ۔ یہ بات آج یہاں تلنگانہ اسٹیٹ کوآرڈینٹر نیشنل کانفیڈریشن آف ہیومن رائٹس آرگنائزیشنس مسٹر محمد عابد ، صدر تلنگانہ اسٹیٹ پاپلر فرنٹ آف انڈیا مسٹر محمد عبدالعہد نے پریس کانفرنس کے دوران بتائی ۔ انہوں نے بتایا کہ مذکورہ چلو دہلی مجوزہ پروگرام کے مطابق 23 اکٹوبر کو دہلی میں واقع انڈین ویمنس پریس کارپس (IWPC) میں 3-30 تا 5 بجے شام ایک پریس کانفرنس منعقد کی جائے گی جب کہ 24 اکٹوبر کو 11 بجے دن آندھرا و تلنگانہ بھون کے روبرو احتجاجی مارچ کیا جائے گا جس میں آلیر فرضی انکاونٹر کی سی بی آئی تحقیقات کروانے ، متاثرین کے افراد خاندان کو معاوضہ دینے اور خاطی پولیس ملازمین کے خلاف قتل کے تحت مقدمہ درج کرنے کا مطالبہ کیا جائے گا ۔ انہوںنے بتایا کہ پی ایم او کی جانب سے چیف سکریٹری حکومت تلنگانہ کو واقعہ سے متعلق حقائق پر مبنی رپورٹ روانہ کرنے کی ہدایت دی گئی ہے لیکن اس سلسلہ میں حکومت تلنگانہ کی جانب سے کوئی اقدامات نہیں کئے جارہے ہیں جب کہ اس واقعہ کی تحقیقات کو ایس آئی ٹی کے حوالے کر کے اس مسئلہ کو برفدان کی نذر کردیا گیا ہے ۔ انہوں نے مرکزی و ریاستی حکومتوں سے مطالبہ کیا کہ فوری طور پر آلیر انکاونٹر واقعہ کی سی بی آئی کے ذریعہ تحقیقات کا حکم دینے کے علاوہ متاثرین کے افراد خاندان کو فی کس 30 لاکھ روپئے بطور ایکس گریشیا معاوضہ دینے کے ساتھ ساتھ خاطی پولیس ملازمین کے خلاف قتل کے تحت دفعہ IPC 302 مقدمہ درج کیا جائے تاکہ متاثرین کے افراد خاندان کو انصاف مل سکے ۔ اس موقع پر جنرل سکریٹری پی یو سی ایل تلنگانہ اسٹیٹ شریمتی جیاوندھیالا ، مسٹر محمد احمد ( والد وقار احمد ) ، مسٹر سید امتیاز علی ( برادر امجد علی ) بھی موجود تھے ۔۔

TOPPOPULARRECENT