Saturday , December 16 2017
Home / Top Stories / آندھرا بینک ملک پیٹ برانچ پر کوئی پرسان حال نہیں ، کھاتہ دار پریشان حال

آندھرا بینک ملک پیٹ برانچ پر کوئی پرسان حال نہیں ، کھاتہ دار پریشان حال

ضعیف مرد و خواتین اور شہریوں کی طویل قطار ، عہدیدار بے بس ، نقدی نہ ہونے کا بہانہ
حیدرآباد۔24نومبر(سیاست نیوز)آندھرا بینک ملک پیٹ برانچ کے کھاتہ داروں کا کوئی پرسان حال نہیں ہے جہاں پر اکثریت حکومت کی ویلفیر اسکیم کے تحت جاری کئے جانے والے وظیفے یابوں کے کھاتوں کی ہے ۔ پچھلے ایک ہفتے سے یہاں پر کھاتے داروں کو اپنی رقم حاصل کرنے میںدشواریاں پیش آرہی ہیں ۔ عام کھاتے دار جن کا تعلق متوسط اور غریب طبقے سے ہے گھنٹوں قطار میںکھڑے رہنے کے بعد بھی انہیں پیسے نہیں مل رہے ہیں۔بالخصوص خواتین کی طویل قطاریں جو پچھلے دوہفتوں سے مسلسل بینک کے چکر کاٹ رہے ہیںکوئی ان کاپرسان حال نہیں ہے۔ آج تو ملک پیٹ برانچ کے بینک انتظامیہ نے حد ہی کردی ۔ نقدی نہ ہونے کا بہانہ کرتے ہوئے دوپہر3بجے تک بینک بندر کھا گیا۔ بینک کھولنے کے انتظار میں صبح نو بجے سے وہاں پر خواتین کی قطار لگی ہوئی تھی۔ دوپہر 3بجے کے بعد بینک کھولا گیا ۔ انتظامیہ نے بتایا کہ انہیں آج صرف چار لاکھ روپئے دئے گئے ہیںلہذا وہ اپنے کھاتہ داروں کوصرف تین ہزار روپئے جاری کرسکتے ہیں۔ برہم کھاتہ داروں نے آندھرا بینک ملک پیٹ برانچ انتظامیہ پر الزام عائد کیاہے کہ وہ بڑے کھاتہ داروں کو یومیہ لاکھوں روپئے ادا کررہے ہیںجبکہ غریب اور حکومت کی فلاحی اسکیمات کے تحت وظائف حاصل کرنے والوں کو رقم ادا کرنے سے گریز کیاجارہاہے ۔ بینک بند ہونے کی وجہہ سے کھاتہ داروں کے ساتھ ملاکر مقامی رضاکارانہ تنظیم چھتری کے کارکنو ں نے احتجاجی دھرنا بھی منظم کیاجس کے پیش نظر پولیس کی نگرانی میںبینک انتظامیہ نے آج دوپہر 3بجے سے بینک کاکام شروع کیا مگر نقدی کی کمی کے سبب صبح سے پیسوں کے انتظار میںکھڑے اکثر کھاتے دارآج بھی یہاں سے خالی ہاتھ ہی لوٹے۔

TOPPOPULARRECENT