Wednesday , November 22 2017
Home / شہر کی خبریں / آندھرا پردیش اقلیتی بہبود اسکیمات پر موثر عمل آوری کی ہدایت

آندھرا پردیش اقلیتی بہبود اسکیمات پر موثر عمل آوری کی ہدایت

ائمہ کرام کو 5000 اور موذن کو ماہانہ 3000 روپئے مشاہیر ادا کئے جائیں گے
حیدرآباد۔/18 اکٹوبر، ( سیاست نیوز) آندھرا پردیش حکومت نے اقلیتی بہبود کی اسکیمات پر موثر عمل آوری اور بجٹ کے خرچ کے سلسلہ میں عہدیداروں کو واضح ہدایات جاری کی ہیں۔ وزیر اقلیتی بہبود ڈاکٹر پی رگھوناتھ ریڈی نے آج وجئے واڑہ میں اقلیتی بہبود کی کارکردگی کا عہدیداروں کے اجلاس میں جائزہ لیا۔ سکریٹری اقلیتی بہبود ایس ایس راوت، منیجنگ ڈائرکٹر اقلیتی فینانس کارپوریشن اوشا کماری ( آئی اے ایس )، ڈائرکٹر اقلیتی بہبود شیخ محمد اقبال، چیف ایکزیکیٹو آفیسر وقف بورڈ ایل عبدالقادر کے علاوہ تمام اضلاع کے ڈسٹرکٹ میناریٹی ویلفیرآفیسرس، ایکزیکیٹو ڈائرکٹرس اور وقف بورڈ کے انسپکٹرس نے شرکت کی۔ ایک دن تک جاری رہے اس پروگرام میں اقلیتی بہبود کے عہدیداروں کو اضلاع میں اسکیمات پر موثر عمل آوری کے سلسلہ میں رہنمایانہ خطوط جاری کئے گئے۔ ڈاکٹر پی رگھوناتھ ریڈی نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ائمہ و موذنین کو اعزازیہ سے متعلق اسکیم پر 15نومبر تک عمل آوری مکمل کرلی جائے۔ اس اسکیم کے تحت آندھرا پردیش میں 2500 مساجد کا انتخاب کیا گیا ہے اور ائمہ کو ماہانہ 5000 روپئے اور موذن کو ماہانہ 3000 روپئے ادا کئے جائیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ 900 مساجد کو اعزازیہ کی رقم جاری کردی گئی ہے اور باقی مساجد کیلئے 15 نومبر تک اجرائی کا کام مکمل کرلیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ غریب مسلم لڑکیوں کی شادی کے موقع پر امداد سے متعلق ’ دلہن‘ اسکیم کے تحت 51 ہزار روپئے کی امداد دی جارہی ہے۔ انہوں نے اس اسکیم کی تمام زیر التواء درخواستوں کی عاجلانہ یکسوئی کی ہدایت دی۔ انہوں نے کہا کہ آندھرا پردیش حکومت اقلیتوں کی بھلائی کے حق میں سنجیدہ ہے۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے اقلیتی بہبود کی کارکردگی بہتر بنانے کیلئے انہیں ہدایت دی ہے۔

 

انہوں نے کہا کہ چندرا بابو نائیڈو متحدہ آندھرا پردیش کے چیف منسٹر کی حیثیت سے بھی اقلیتی اسکیمات اور ان کی ترقی کے سلسلہ میں مثالی اقدامات کرچکے ہیں۔ آج بھی متحدہ آندھرا پردیش کے اضلاع میں چندرا بابو نائیڈو کی اقلیت دوست چیف منسٹر کی حیثیت سے شناخت برقرار ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے اقلیتی بہبود کے بجٹ میں اضافہ کرتے ہوئے 710 کروڑ روپئے کیا ہے اور آئندہ مالیاتی سال اس میں اضافہ کا امکان ہے۔ ڈاکٹر رگھوناتھ ریڈی نے ڈسٹرکٹ میناریٹی ویلفیر آفیسرس اور دیگر عہدیداروں سے کہا کہ وہ اسکیمات پر عمل آوری کے سلسلہ میں وقفہ وقفہ سے حکومت کو پروگریس رپورٹ پیش کریں۔ انہوں نے کہا کہ ضلع کلکٹرس کے ذریعہ اسکیمات پر عمل آوری کی جائے۔ وزیر اقلیتی بہبود نے اوقافی جائیدادوں کے تحفظ اور ان کی ترقی کیلئے اقدامات کی ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ اوقافی جائیدادوں کی آمدنی مسلمانوں کی بھلائی پر خرچ کی جانی چاہیئے۔ منشائے وقف کے مطابق تمام بڑی درگاہوں کی آمدنی کے خرچ کو یقینی بنایا جائے۔ انہوں نے بتایا کہ لیز پر جن جائیدادوں کی نشاندہی کی گئی اس کے بارے میں حکومت جلد ہی کوئی فیصلہ کرے گی۔ سکریٹری اقلیتی بہبود ایس ایس راوت نے ضلعی عہدیداروں کو اسکیمات پر شفافیت کے ساتھ عمل آوری کے طریقہ کار اور درخواستوں کی جانچ کے رہنمایانہ خطوط سے واقف کرایا۔

TOPPOPULARRECENT