Thursday , December 14 2017
Home / شہر کی خبریں / آندھرا پردیش میں آج تعلیمی اداروں کو بند رکھنے کی اپیل

آندھرا پردیش میں آج تعلیمی اداروں کو بند رکھنے کی اپیل

طلبہ کی بڑھتی اموات پر اظہار تشویش،وائی ایس آر کانگریس پارٹی کا اعلان
حیدرآباد۔/15اکٹوبر ، ( سیاست نیوز) آندھرا پردیش وائی ایس آر کانگریس پارٹی کی طلباء تنظیم نے ریاست میں خودکشی کے ذریعہ بڑھتی ہوئی طلبہ کی اموات کے واقعات کے خلاف بطور احتجاج کل یعنی 16اکٹوبر کو ریاست کے تعلیمی اداروں ( کارپوریٹ ) کے بند منظم کرنے کا فیصلہ کیا اور اس طرح وائی ایس آر کانگریس پارٹی طلباء تنظیم نے 16اکٹوبر کو ریاست آندھرا پردیش کے تمام کارپوریٹ تعلیمی اداروں کے بند کو کامیاب بنانے کی طلباء سے پرزور اپیل کی۔ وائی ایس آر کانگریس پارٹی طلباء تنظیم نے بتایا کہ گزشتہ تین سال کے دوران ریاست آندھرا پردیش کے کارپوریٹ تعلیمی اداروں میں زائد از 40 طلبہ کی اموات کے واقعات پیش آچکے ہیں۔ لیکن اس سنگین صورتحال کے باوجود ریاستی حکومت کوئی انسدادی اقدامات نہیں کررہی ہے بلکہ کسی بھی نوعیت کی کارروائی کرنے سے عمداً گریز کررہی ہے۔ صدر وائی ایس آر کانگریس پارٹی طلباء تنظیم مسٹر سلام بابو نے مذکورہ اظہار خیال کیا۔ انہوں نے بتایا کہ گزشتہ دو سال کے دوران ہی صرف چینتیہ نارائنا جیسے کارپوریٹ تعلیمی داروں میں سرکاری اعداد و شمار کی روشنی میں 38 طلباء خودکشی کرلینے پر مجبور ہوگئے۔ لیکن حکومت نے کوئی کارروائی کرنے کے بجائے صرف فرض کی تکمیل کیلئے برائے نام اقدامات کرنے جیسا رول ادا کیا۔ انہوں نے حکومت کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ محض وزیر بلدی نظم و نسق مسٹر نارائنا کے تعلیمی ادارے ہونے کی وجہ سے وزیر فروغ انسانی وسائل مسٹر جی سرینواس راؤ محض نارائنا وزیر بلدی نظم و نسق اپنے سمدھی ہونے کے پیش نظر ہی کسی سخت کارروائی سے گریز کررہے ہیں۔ مسٹر سلام بابو نے صدر وائی ایس آر کانگریس پارٹی طلباء تنظیم ( اسٹوڈنٹس ونگ ) نے نارائنا تعلیمی اداروں میں خودکشی کے ذریعہ پیش آنے والے اموات واقعات کی برسر خدمت ہائی کورٹ جج کے ذریعہ مکمل تحقیقات کروانے کا حکومت سے پرزور مطالبہ کیا۔ بصورت دیگر بڑے پیمانے پر ریاست گیر احتجاج منظم کرنے کا سخت انتباہ دیا۔

 

TOPPOPULARRECENT