Monday , January 22 2018
Home / شہر کی خبریں / آندھرا پردیش میں وقف اراضیات کی ترقی اور آمدنی میں اضافہ کی حکمت عملی

آندھرا پردیش میں وقف اراضیات کی ترقی اور آمدنی میں اضافہ کی حکمت عملی

اقلیتی بہبود کے لیے 376 کروڑ کا بجٹ مختص ، شیخ محمد اقبال اسپیشل سکریٹری اقلیتی بہبود کا بیان

اقلیتی بہبود کے لیے 376 کروڑ کا بجٹ مختص ، شیخ محمد اقبال اسپیشل سکریٹری اقلیتی بہبود کا بیان
حیدرآباد۔/12مارچ، ( سیاست نیوز) اسپیشل سکریٹری اقلیتی بہبود آندھرا پردیش شیخ محمد اقبال نے کہا کہ اگرچہ حکومت نے سال 2015-16 کیلئے اقلیتی بہبود کا بجٹ 379کروڑ مختص کیا ہے تاہم محکمہ اوقافی جائیدادوںکی ترقی کے ذریعہ آمدنی کی حکمت عملی تیار کررہا ہے تاکہ اوقافی جائیدادوں کی ترقی سے ہونے والی آمدنی کو اقلیتی بہبود پر خرچ کیا جاسکے۔ محکمہ نے آندھرا پردیش حکومت کو 930 کروڑ کی بجٹ سفارشات پیش کی تھی تاہم حکومت نے 379کروڑ کو بجٹ میں شامل کیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ آندھرا پردیش میں اقلیتوں کیلئے ’ روشنی‘ اور ’ دکان مکان ‘ اسکیمات کے احیاء کا فیصلہ کیا گیا تاکہ اقلیتوں کو نہ صرف پیشہ ورانہ کورسیس میں ٹریننگ کا اہتمام کیا جائے بلکہ انہیں خود روزگار اسکیمات سے وابستہ کرنے امداد فراہم کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت آندھرا پردیش اقلیتوں کی تعلیمی ترقی کے ساتھ ساتھ معاشی ترقی پر خصوصی توجہ دے گی۔ حکومت نے حالیہ جائزہ اجلاس میں اس سلسلہ میں محکمہ اقلیتی بہبود کو واضح ہدایات جاری کی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ آندھرا پردیش میں قیمتی اوقافی جائیدادیں اور اراضیات کو خانگی اداروں کے اشتراک سے ترقی دینے کا منصوبہ تیار کیا جارہا ہے۔ محکمہ اقلیتی بہبود اس سلسلہ میں کھلی اراضیات کی نشاندہی کرے گا جس کے بعد خانگی اداروں کو لیز پر یہ اراضیات حوالے کی جائیں گی۔ انہوں نے کہا کہ آندھرا پردیش میں ایک انچ بھی اوقافی اراضی کو غیر مجاز قبضہ میں رہنے نہیں دیا جائے گا۔ ہر ضلع میں ضلع کلکٹر، ایس پی اور ریونیو کے اعلیٰ عہدیداروں کے ساتھ ٹاسک فورس کمیٹیاں تشکیل دی گئی ہیں تاکہ تمام محکمہ جات کے باہمی تعاون سے اوقافی جائیدادوں کا تحفظ کیا جاسکے۔ شیخ محمد اقبال نے بتایا کہ اسپیشل آفیسر وقف بورڈ کی حیثیت سے انہوں نے آندھرا پردیش میں اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کیلئے جو اقدامات کئے تھے وہ ان پر عمل آوری کا از سر نو جائزہ لے رہے ہیں۔ حکومت کو اس بات کی شکایت وصول ہوئی ہے کہ وقف بورڈ کے بعض عہدیداروں نے ناجائز قابضین اور ایسے متولی جو بے قاعدگیوں میں ملوث ہیں ان کے خلاف تحقیقات میں نرم رویہ اختیار کیا ہے۔ اس سلسلہ میں تمام متعلقہ فائیلوں کو طلب کرتے ہوئے حکومت آندھرا پردیش ان کا از سر نو جائزہ لے گی۔ تحقیقات اور کارروائی کے سلسلہ میں تساہل اور نرم رویہ اختیار کرنے والے عہدیداروں کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے جو بجٹ مختص کیا ہے اس کے مکمل خرچ کو یقینی بنایا جائے گا۔ اقلیتی اداروں کی تقسیم کا عمل جلد مکمل ہوگا جس کے بعد ـآندھرا پردیش میں اقلیتی ادارے آزادانہ طور پر خدمات انجام دیں گے۔ اقلیتی اداروں میں عہدیداروں اور ملازمین کی کمی دور کرنے کیلئے حکومت سے نمائندگی کی گئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT