Wednesday , November 22 2017
Home / شہر کی خبریں / آندھرا پردیش میں پانی کی قلت کے خلاف انوکھا احتجاج

آندھرا پردیش میں پانی کی قلت کے خلاف انوکھا احتجاج

کھلگوں پر برسر اقتدار قائدین کے تصاویر سے گشت ، خالی گھڑوں سے احتجاج ، روجا کی حکومت پر تنقید
حیدرآباد ۔ 20 ۔ اپریل : ( سیاست نیوز ) : وائی ایس آر کانگریس پارٹی کی سینئیر قائد رکن اسمبلی شریمتی روجا نے چیف منسٹر مسٹر این چندرا بابو نائیڈو جنرل سکریٹری تلگو دیشم پارٹی و وزیر پنچایت راج آندھرا پردیش مسٹر این لوکیش نائیڈو کے علاوہ رکن اسمبلی تلگو دیشم پارٹی مسٹر این بالا کرشنا کے خلاف سنسنی خیز ریمارکس کیے اور دریافت کیا کہ آیا آندھرا پردیش میں عوام کو پانی فراہم کرنے جیسی صورتحال پائی جارہی ہے ؟ آج وجئے واڑہ میں وائی ایس آر کانگریس پارٹی آفس میں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے شریمتی روجا نے کہا کہ ’ کھلگوں ‘ پر مذکورہ قائدین کے نام تحریر کر کے گھمایا گیا اور خالی گھڑوں کے ساتھ خواتین و عوام سڑکوں پر آکر احتجاجی دھرنا منظم کیا ۔ جس پر ان قائدین کو اپنا سرشرم سے جھکا لینا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ بالا کرشنا نے ابھی سے ہی حلقہ اسمبلی ہندوپورم کے لیے پانی کی قلت پیدا کر رکھی ہے اور حلقہ اسمبلی کپم میں چیف منسٹر مسٹر این چندرا بابو نائیڈو عوام کو پانی فراہم کرنے کے موقف میں نہیں ہیں ۔ شریمتی روجا نے وزیر آبپاشی مسٹر ڈی اوما مہیشور راؤ کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ مسٹر اوما مہیشور راؤ کم از کم اپنے ضلع کرشنا و بشمول اپنے حلقہ اسمبلی میں عوام کو پانی فراہم کرنے کے موقف میں نہیں ہیں لیکن وہ اس بات کا دعویٰ کرتے ہیں کہ پولی ویندولہ کو پانی فراہم کرنے اور پٹی سیما کے ذریعہ علاقہ رائلسیما کو پانی فراہم کرنے کا اظہار کرتے ہوئے رائلسیما عوام کے ساتھ دھوکہ دے رہے ہیں ۔ انہوں نے چیف منسٹر کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ تجربہ کار و سینئیر قائدین کو رکھتے ناتجربہ کار و بہت ہی جونیر قائدین کو وزارتی عہدے فراہم کرتے ہوئے سینئیر قائدین کی بے عزتی و توہین کی ہے جو کہ انتہائی شرمناک بات ہے ۔۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT