Sunday , November 19 2017
Home / شہر کی خبریں / آندھرا پردیش میں پولیس بھرتیوں کیلئے طریقہ کار میں تبدیلی

آندھرا پردیش میں پولیس بھرتیوں کیلئے طریقہ کار میں تبدیلی

5 کیلومیٹر کی دوڑ کا طریقہ کار برخواست ۔ تقررات کیلئے اعلامیہ جاری ۔ ڈی جی پی راموڈو
وجئے واڑہ 22 جولائی ( پی ٹی آئی ) آندھرا پردیش پولیس نے جاریہ سال سے کانسٹیبلس اور سب انسپکٹرس تقررات کیلئے خاطر خواہ تبدیلیوں کو متعارف کروایا ہے ۔ تبدیلیوں کے مطابق اب پانچ کیلو میٹر دوڑ ( خواتین کیلئے ڈھائی کیلو میٹر ) کو برخواست کروادیا گیا ہے جو ابتدائی اہلیت ٹسٹ کی حیثیت رکھتی تھی ۔ اس کے علاوہ جسمانی تیاری کے پانچ ٹسٹوں کی تعداد کو کم کرکے تین کردیا ہے ۔ ڈائرکٹر جنرل آف پولیس جے وی راموڈو نے بتایا کہ اس دوڑ کی بجائے اب امیدواروں کو ایک میل دوڑ میں حصہ لینا ہوگا جس میں وقت کی قید خواتین اور مردوں کیلئے مختلف ہے ۔ چونکہ پانچ کیلومیٹر دوڑ کے دوران اکثر جانی نقصانات ہوئے ہیں اس لئے محکمہ نے اس کو ختم کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آئی ایس عہدیداروں اور سپرنٹنڈنٹ پولیس ( ریاستی کیڈر ) کے تقررات کے وقت ایسا کوئی امتحان نہیں ہے ۔ جسمانی بہتری کو ٹریننگ کے دوران یقینی بنایا جاسکتا ہے ۔ اس لئے ہم نے سب انسپکٹرس اور دوسرے کیڈرس کے تقررات میں بھی یہی طریقہ اختیار کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ مسٹر راموڈو نے آج 3,126 کانسٹیبلس ( سیول ) اور 1,067 کانسٹیبلس ( آرمڈ ریزرو ) کے تقررات کیلئے اعلامیہ جاری کیا ۔ یہ اعلامیہ محکمہ میں 14,000 تقرر طلب جائیدادوں پر بھرتیوں کی سمت پہلا قدم ہے ۔ مسٹر راموڈو نے اے پی اسٹیٹ لیول پولیس رکروٹمنٹ بورڈ کی ویب سائیٹ کا بھی آغاز کیا ۔ اسی ویب سائیٹ کے ذریعہ امیدوار ان تقررات کیلئے درخواستیں پیش کرسکتے ہیں۔ انہوں نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سیول کانسٹیبلس میں خواتین کو 33 فیصد اور آرمڈ ریزرو میں 20 فیصد تحفظات فراہم کئے جائیں گے ۔ انہوں نے بتایا کہ ضرورت پڑنے پر آرمڈ ریزرو میں خواتین کیلئے تحفظات کی حد کو مزید بڑھایا جاسکتا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ ریاست کی تقسیم کے بعد محکمہ پولیس میں بھرتیوں کیلئے یہ پہلا اعلامیہ جاری کیا گیا ہے ۔ محکمہ پولیس میں حالانکہ 14,000 جائیدادیں تقرر طلب ہیں لیکن ہم بیک وقت یہ تقررات عمل میں نہیں لا سکتے کیونکہ ہمارے پاس اتنی تعداد کیلئے ٹریننگ سہولیات دستیاب نہیں ہیں۔ ان جائیدادوں پر مرحلہ وار انداز میں تقررات عمل میں لائے جائیں گے ۔ ریاست کی تقسیم کے بعد اے پی اور تلنگانہ میں ابھی پولیس فورس کی تقسیم عمل میں نہیں آئی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT