Monday , December 11 2017
Home / دنیا / آنگ سان سوچی واضح اکثریت سے کامیابی کی جانب گامزن

آنگ سان سوچی واضح اکثریت سے کامیابی کی جانب گامزن

ینگون ۔ 10 نومبر۔(سیاست ڈاٹ کام) میانمار کی قائد اپوزیشن آنگ سان سوچی کی پارٹی کو اب ایسا لگتا ہے کہ عام انتخابات میں یقینی طورپر واضح اکثریت سے کامیابی ملنے والی ہے جس کے بعد مائنمار ایک ایسا جمہوری ملک بن کر دنیا کے نقشہ پر اُبھرے گا جہاں کئی دہوں کی فوجی حکومت کے بعد بالآخر عوام کی طاقت کو تسلیم کرنا پڑا کیونکہ حکمراں جماعت کے ایک رکن نے بھی اعتراف کرلیا ہیکہ انتخابات میں اُسے شدید ہزیمت کا سامنا کرنا پڑا ۔ سوچی کی پارٹی نیشنل لیگ فار ڈیموکریسی ( این ایل ڈی ) نے پہلی بار انتخابات میں حصہ لیا جبکہ پارٹی کی داغ بیل 1990ء میں ڈالی گئی تھی اور عوام کی کثیرتعداد ( تناسب کے لحاظ سے 80% ) نے اپنے حق رائے دہی کا استعمال کیا تاکہ نقار خانے میں اب اُن کی آواز طوطی کی اواز نہ بن سکے ۔ اتوار کے بعد سے تاریخی انتخابات کے نتائج آنا شروع ہوگئے تھے اور منگل تک آنے والے نتائج نے واضح کردیا کہ اب تک معلنہ 88 نشستوں کے منجملہ این ایل ڈی ایوان زیریں کی 78 نشستوں پر قبضہ کرلیا ہے ۔ قبل ازیں میانمار کی اپوزیشن رہنما آنگ سان سوچی نے حکومتی الیکشن پینل پر الزام عائد کیا ہے کہ وہ جانتے بوجھتے انتخابی نتائج میں تاخیر کر رہا ہے۔ ان کے مطابق اس کا مقصد ’شاید کوئی چال چلنا ہے‘۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT