Sunday , November 19 2017
Home / جرائم و حادثات / آوٹر رنگ روڈ پر چوکسی میں اضافہ ، مزید گاڑیاں مختص

آوٹر رنگ روڈ پر چوکسی میں اضافہ ، مزید گاڑیاں مختص

انسداد حادثات کیلئے سائبرآباد پولیس کے اقدامات میں اضافہ
حیدرآباد /24 اگست ( سیاست نیوز ) سائبرآباد پولیس نے آوٹر رنگ روڈ پر چوکسی میں اضافہ کیلئے مزید گاڑیوں کو مختص کیا ہے ۔ یاد رہے ک آوٹر رنگ روڈ پر حادثات کی روک تھام کیلئے سابق میں ایچ ایم ڈی اے نے سائبرآباد پولیس کی نگرانی میں 4 پٹرولنگ گاڑیوں کو جاری کیا تھا ۔ تاہم اس کی دیکھ بھال اور نگرانی میں تساہلی کے سبب دو گاڑیاں بند ہوگئیں تھیں ۔ اس ضمن میں سائبرآباد ٹریفک پولیس نے خصوصی دلچسپی لیتے ہوئے تین گاڑیوں کو آج جاری کردیا ۔ ڈپٹی کمشنر آف پولیس ٹریفک مسٹر ایوناش موہنتی نے آج ان تین گاڑیوں کو جھنڈی دکھائی جو آوٹر رنگ روڈ پر حادثات کی روک تھام کے علاوہ چوکسی پر نظر رکھیں گے ۔ اس خصوص میں ڈپٹی کمشنر آف پولیس ٹریفک سائبرآباد مسٹر ایوناش موہنتی نے بتایا کہ دو گاڑیوں کے سبب مشکلات پیش آرہی تھیں ۔ پولیس نے اس ضرورت کو محسوس کرتے ہوئے آج تین بولیورو پٹرولنگ گاڑیوں کو جاری کیا ۔ جو پدا عنبرپیٹ سے گچی باؤلی تک گشت کریں گی اور ٹریفک حادثات کی روک تھام کے علاوہ چوکسی پر بھی توجہ دی جائے گی ۔ انہوں نے بتایا کہ سائبرآباد ٹریفک پولیس کی جانب سے حادثات کی روک تھام ، ٹریفک جام کو روکنے کے موثر اقدامات و اسکیمات پر عمل آوری جاری ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ اوٹررنگ روڈ پر پٹرولنگ کے اس خصوصی اسکیم کا آغاز اگست  2014 میں کیا گیا تھا ۔ 18 اگست 2015 تک 22,879 مقدمات کو درج کرلیا گیا اور جرمانے کے تحت ایک کروڑ 87 لاکھ 94 ہزار 750 روپئے رقم وصول کی گئی ۔ جن میں سب سے زیادہ غیرمجاز طور پر غلط پارکنگ کے 5,995 مقدمات کو درج کیا گیا جس سے 60 لاکھ 13 ہزار 300 روپئے حاصل ہوئے ۔ غلط اور غیر مجاز پارکنگ ، حادثات کی اہم وجہ بتائی جاتی ہے ۔ آوٹر رنگ روڈ پر چونکہ گاڑیوں کی رفتار تیز ہوتی ہے ۔ اس کے سبب صبح کی اولین ساعتوں میں سڑک کے کنارے غلط پارک کردہ گاڑیاں موٹر رانوں کو نظر نہیں آتیجس کے سبب حادثات پیش آتے ہیں ۔ اس کے علاوہ خطرناک انداز میں گاڑی چلانے والوں کے خلاف 462 مقدمات ، مخالف سمت گاڑی چلانے والوں کے خلاف 598 نو انٹری میں داخل ہونے والوں کے خلاف 1584 نو پارکنگ میں پارک کرنے والوں کے خلاف 180 سیل فون پر بات کرتے ہوئے گاڑیاں چلانے والے 33 افراد کے خلاف بھی کارروائی کی گئی ۔

TOPPOPULARRECENT