Monday , September 24 2018
Home / شہر کی خبریں / آوٹر رنگ روڈ کے قریبی مواضعات کو پانی سربراہ کرنے کے اقدامات میں تیزی

آوٹر رنگ روڈ کے قریبی مواضعات کو پانی سربراہ کرنے کے اقدامات میں تیزی

190 مواضعات کی نشاندہی ، اسکیم پر 628 کروڑ کا خرچ ، 30 لاکھ افراد کو فائدہ
حیدرآباد۔ 23 فبروری (سیاست نیوز) آئوٹر رنگ روڈ کے اطراف مواضعات کو مشن بھگیرتا کے تحت صاف پینے کے پانی کی سربراہی کی اسکیم پر حیدرآباد میٹرو واٹر ورکس اینڈ سیویریج بورڈ کی جانب سے عمل آوری تیزی سے جاری ہے۔ آئوٹر رنگ روڈ کے حدود میں 190 مواضعات کی نشاندہی کی گئی جنہیں جاریہ سال اگست تک پانی کے نل کا کنکشن فراہم کردیا جائے گا۔ 628 کروڑ کے صرفے سے اس اسکیم پر عمل کیا جارہا ہے۔ 12 منڈلوں کے تحت 190 مواضعات میں 30 لاکھ افراد کو اس اسکیم سے فائدہ ہوگا اور صاف پینے کا پانی کی فراہمی عمل میں آئے گی۔ منیجنگ ڈائرکٹر حیدرآباد میٹرو واٹر ورکس اینڈ سیویریج بورڈ ایم دانا کشور نے عہدیداروں کے ساتھ اسکیم پر عمل آوری کا جائزہ لیا۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ 57 ایسے گائوں جہاں ٹینکرس کے ذریعہ پانی کی سربراہی کا انتظام ہے وہاں اسکیم پر عاجلانہ عمل آوری پر توجہ دی جائے۔ 190 مواضعات کی صورتحال کا جائزہ لینے کے بعد 57 گائوں کی نشاندہی کی گئی جہاں صاف پینے کے پانی کی شدید ضرورت ہے۔ دانا کشور نے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ 57 گائوں میں اختتام مئی تک صاف پینے کے پانی کی سربراہی عمل میں لائی جائے۔ اوور ہیڈ ٹینکس کی تعمیر اور پائپ لائین کا کام سے متعلق مٹیریئل حاصل کرلیا گیا ہے۔ حکومت نے مشن بھگیرتا کے تحت آئوٹر رنگ روڈ کے اطراف کے مواضعات کو پانی کی سربراہی کا کام حیدرآباد میٹرو واٹر ورکس بورڈ کے حوالے کیا ہے۔ اس اسکیم کے تحت 174 اوورہیڈ ٹینکس کی تعمیر عمل میں لائی جائے گی جس کے تحت 44,700 کیلو لیٹر پانی کا ذخیرہ کیا جائے گا۔ ان ٹینکوں کے ذریعہ پانی کی سربراہی کی صورت میں 1733 کیلومیٹر پائپ لائین بچھائی جائے گی۔ جن منڈلوں میں اس اسکیم پر عمل آوری ہوگی ان میں راجندر نگر، رام چندرا پورم، پٹن چیرو، قطب اللہ پور، گنڈی میسماں، گھٹکیسر، کیسرا، شامیرپیٹ، میڑچل، سرورنگر، مہیشورم، شمس آباد، حیات نگر اور ابراہیم پٹنم شامل ہیں۔

TOPPOPULARRECENT