Sunday , December 17 2017
Home / شہر کی خبریں / آٹو موبائیل صنعت کو برقی گاڑیوں کی تیاری کا مشورہ

آٹو موبائیل صنعت کو برقی گاڑیوں کی تیاری کا مشورہ

آلودگی میں اضافہ حکومت کیلئے باعث تشویش ، آئی ایس بی میںمرکزی وزیر ٹرانسپورٹ نتن گڈکری کا خطاب
حیدرآباد۔ 24 ستمبر (پی ٹی آئی) مرکزی وزیر روڈ ٹرانسپورٹ، شاہراہیں و جہاز رانی نیتن گڈکری نے آج کہا کہ گاڑیوں سے ہونے والی آلودگی پر حکومت کو تشویش ہے۔ انہوں نے آٹو موبائیل صنعت پر زور دیا کہ روایتی ایندھن کے بجائے الیکٹرک گاڑیوں کی تیاری کے شعبہ پر توجہ مرکوز کی جائے۔ انڈین اسکول آف بزنس (آئی ایس بی) کے زیراہتمام آئی ایس بی لیڈرشپ سمٹ میں حصہ لینے کے لئے وہ شہر میں پہونچے تھے۔ ملک کو 2030 تک تمام الیکٹرک گاڑیوں کا مارکٹ بنانے حکومت کے منصوبہ کے بارے میں مختلف سوالات کا جواب دیتے ہوئے گڈکری نے کہا کہ ’’ہم آٹو موبائیل صنعت کے مخالف نہیں ہے۔ ہم 1.5 لاکھ کروڑ روپئے مالیتی آٹو موبائیل برآمد کرتے ہیں۔ اس صنعت میں روزگار کے سب سے زیادہ مواقع ہیں۔ میں نے ان (آٹو موبائیل بنانے والوں) سے کہا کہ وہ برآمدات جاری رکھیں‘‘۔ انہوں نے مزید کہا کہ ’’لیکن اب آلودگی سب سے بڑی تشویش ہے۔ آپ دیسی ساختہ ٹیکنالوجی کو ترجیح دیں۔ ہندوستان اب آئیل اور تواناائی کے فاضل ذخائر کا حامل ملک بن چکا ہے۔ یہ دونوں بہت سستے ہیں۔ عوام کو بھی فائدہ ہوگا۔ اس کو ترجیح دیں۔ آپ بھی عوامی ٹرانسپورٹ نظام میں برقی کا استعمال کریں‘‘۔ وزیر ٹرانسپورٹ نے کہا کہ پہلے یومیہ اوسطاً 2 کیلومیٹر سڑک بچھائی جاتی تھی لیکن آج یومیہ 28 کیلومیٹر سڑک بچھائی جارہی ہے۔ سڑک حادثات کے بارے میں انہوں نے کہا کہ ان میں اب 4 تا 5 فیصد کی معمولی کمی ہوئی ہے۔ اعداد بیان کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ’’جب میں نے جائزہ لیا تھا، سڑک حادثات میں سالانہ 5 لاکھ افراد فوت ہوتے تھے۔ ہندوستانی شاہراہوں پر ہم نے 780 خطرناک مقامات کی نشاندہی کی۔ حادثات میں 50% کمی ہمارا نشانہ ہے‘‘۔ گڈکری نے کہا کہ ہندوستانی زراعت کو 20% کی شرح سے ترقی کرنا ہوگا تاکہ دیہی علاقوں میں روزگار کے مواقع پیدا ہوں اور شہری علاقوں کو نقل مکانی کی حوصلہ شکنی ہوسکے۔

TOPPOPULARRECENT