Wednesday , November 22 2017
Home / Top Stories / آٹو ڈرائیور ’’ بابا ‘‘ کی انسانیت نوازی

آٹو ڈرائیور ’’ بابا ‘‘ کی انسانیت نوازی

بنگلور کی خاتون سنگرکو یوروپی ویزا حصول کے لیے رقم کی قلت پر مدد
حیدرآباد ۔ 19 ۔ اپریل : ( سیاست نیوز ) : بنگلور کی اجنبی خاتون کی حیدرآبادی آٹو ڈرائیور ’ بابا ‘ نے اس وقت مالی مدد کرتے ہوئے انسانیت نوازی کا مظاہرہ کیا جب ویزا حاصل کرنے کے لیے خاتون کے پاس پیسوں کی کمی تھی اور سارے اے ٹی ایم سنٹرس پر نوکیاش کے بورڈ آویزاں تھے ۔ ایسے دور میں جب ایک دوسرے کو جاننے پہچاننے والے بھی ضرورت پڑنے پر ایک دوسرے کی مدد کرنے کے لیے آگے نہیں آتے حیدرآبادی غریب آٹو ڈرائیور بابا نے یوروپ کا دورہ کرنے کے لیے ویزا حاصل کرنے حیدرآباد پہونچنے والی بنگلور کی کلاسیکل سنگر واری جاشری وینوگوپال کو اپنے بچوں کی اسکول فیس کے لیے جمع کردہ 3 ہزار روپئے کی مالی مدد کی ۔ بنگلور کی خاتون جب ویزا انٹرویو کے لیے پہونچی تو ان سے 5 ہزار روپئے ویزا فیس طلب کیا گیا تاہم وری جاشری کے پاس اس وقت صرف 2 ہزار روپئے ہی نقد رقم تھی ماباقی 3 ہزار روپئے کا انتظام کرنے کے لیے آٹو ڈرائیور کے ساتھ شہر کے  10 تا 15 اے ٹی ایم سنٹرس پہونچی مگر ہر جگہ کیاش کی قلت تھی ۔ جس سے کلاسیکل سنگر حیران و پریشان ہوگئی ۔ یہاں تک کہ اس خاتون نے کئی بڑے اسٹورس پہونچکر ان کے کارڈ سے سوئیپ کر کے نقد رقم دینے کی منت و سماجت کی مگر نقد رقم حاصل کرنے میں ناکام ہوگئی ۔ ایسے میں انسانی ہمدردی کا مظاہرہ کرتے ہوئے آٹو ڈرائیور بابا نے اپنے پاس موجود رقم کی پیشکش کی جس سے اجنبی خاتون بے حد متاثر ہوگئی اور بے ساختہ اس خاتون نے واپس ادائیگی کے بارے دریافت کیا تو آٹو ڈرائیور نے ہوٹل پہونچکر لوٹا دینے کا مشورہ دیا ۔ کہا جاتا ہے کہ ہندوستان میں انسانی ہمدردی ، شرافت رحمدلی ، محبت و مروت کا مشاہدہ حقیقت میں کہیں کیا جاسکتا ہے تو وہ شہر حیدرآباد ہے ۔ ایک ایسے وقت لوگ بالخصوص خواتین اپنی حفاظت کو لے کر پریشان و فکر مند ہیں ۔ حیدرآباد کے ایک مسلم آٹو ڈرائیور بابا نے انسانی ہمدردی کی بہترین مثال پیش کی ہے ۔ حالانکہ 3 ہزار روپئے خاتون کلاسیکل سنگر کے لیے کوئی بڑی بات نہیں تھی ۔ لیکن بروقت مدد کرنے پر وہ بہت خوش ہوگئی اور انہوں نے آٹو ڈرائیور کے ساتھ سیلفی لیتے ہوئے اس کو سوشیل میڈیا کے فیس بک پر پوسٹ کردیا اور خاتون نے اجنبی شہر میں ایک ہمدرد دوست ملنے پر ان کے لیے اعزاز ہونے کا اپنے پوسٹ میں تبصرہ کیا ہے ۔ جس کو 32 ہزار لوگوں نے لائیک کیا ہے ۔ سینکڑوں لوگوں نے شیر کیا ہے اور ہزاروں لوگوں نے بھی اپنے ردعمل کا اظہار کیا ہے ۔ خاتون سنگر نے اپنے پوسٹ میں لکھا ہے کہ ایک اجنبی شہر میں اجنبی خاتون کی مدد کرنے میں آٹو ڈرائیور کا کوئی مفاد نہیں تھا ۔ بس انسانی ہمدردی تھی ویسے زندگی ہر روز نیا سبق دیتی ہے  لیکن بابا کی شکل میں مجھے ایک اچھا دوست ملا ہے ۔ مجھے یقین ہوگیا کہ انسانیت ہی سب سے بڑا مذہب ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT