Tuesday , February 20 2018
Home / مذہبی صفحہ / آپ ؐ کی حیات مبارکہ انفرادی و اجتماعی زندگی کا حسین نمونہ

آپ ؐ کی حیات مبارکہ انفرادی و اجتماعی زندگی کا حسین نمونہ

حضور اکرم صلی اﷲ علیہ و آلہٖ و سلم خاتم النبین و سیدالمرسلین ہیں ۔آپ کی حیاتِ طیبہؐ ہی انفرادی و اجتماعی زندگی کا حسین نمونہ ہے ۔ آپؐ کے اُسوہ حسنہ کی حقیقت رحمۃ للعالمین ہے اور اس حقیقت و واقفیت کو خود رب تبارک و تعالیٰ نے انتہائی قطعیت اور معجز نما ایجاز بلاغت سے اس طرح بیان فرمایا ’’اور ہم نے آپ (صلی اﷲ علیہ و آلہٖ وسلم) کو تمام جہان والوں کے لئے رحمت بناکر ہی بھیجا ہے ‘‘۔ آپ صاحب خلق عظیم ہیں ۔ اﷲ تعالیٰ کی جملہ کائنات آپ کے عالم گیر و ہمہ گیر اخلاق حسنہ یا خلق عظیم سے مستفید ہورہی ہے اور قیامت تک ہوتی رہے گی ۔ آپ ہر عالم اور اس کی مخلوقات کے لئے محبت ، شفقت اور احسان ہیں۔ آپ کی زندگی میں سچ تھا جھوٹ نہ تھا ، عدل تھا ظلم نہ تھا ، صدق و اخلاق تھا کذب و نفاق نہ تھا ۔ شفقت و محبت تھی ، حسد و عداوت نہ تھی ، حلم و رحم تھا غصہ و انتقام نہ تھا ، ہمدردی و غمگساری تھی تغافل و جفاکاری نہ تھی ۔ انکساری و تواضع تھی ، غرور و تکبر نہ تھا۔الغرض آپ کی سیرت جملہ محاسن و مکارم اخلاق سے اس طرح مزین تھی کہ ہر کوئی اپنا ہو یا پرایا یہ بول اُٹھا کہ آپ ؐ احباب و اغیار سب کے لئے رحمت تھے اور ہمیشہ رحمت رہیں گے ۔ آپؐ اس قدر فیاض و سختی ، محسن و مخیر تھے کہ آپ کے پاس جو کچھ ہوتا اہل احتیاج میں تقسیم کردیتے ۔ چنانچہ آپ ﷺ نے نہ صرف اپنی کمائی بلکہ اُم المؤمنین حضرت خدیجۃ الکبریٰ رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے نکاح کے بعد اُم المؤمنین کی دولت مبارکہ سے فلاحی و رفاہی کاموں اور تحریک اسلام کیلئے خرچ فرمایا ۔ آئیے اس مبارک ماہ ربیع النور کی آمد آمد پر تمام عاشقان رسول یہ عزم صمیم کریں کہ اس بابرکت و باسعادت مہینہ کے توسط سے بقیہ۱۱ ماہ بھی بلکہ تمام زندگی ہم اتباع رسول و سنت رسول میں زندگی گذار دیں گے اور سرکار دوعالم ﷺ کے اُسوۂ حسنہ کو اپنی زندگیوں میں شامل فرمائیں گے ۔

TOPPOPULARRECENT