Tuesday , November 21 2017
Home / Top Stories / آیوروید کے ذریعہ صحت کا انقلاب لانے کا وقت آچکا : مودی

آیوروید کے ذریعہ صحت کا انقلاب لانے کا وقت آچکا : مودی

ملک کے ہر ضلع میں آیوروید ہاسپٹلس کے قیام کا منصوبہ ،ماہرین سے ایلوپیتھی کی مانند تیز اثر ادویات دریافت کرنے کی اپیل
نئی دہلی۔ 17 اکتوبر (سیاست ڈاٹ کام)وزیراعظم نریندر مودی نے آج کہا کہ حکومت، ملک کے ہر ضلع میں ایک آیوروید اسپتال قائم کرنے کی سمت کام کررہی ہے اور ادعا کیا کہ روایتی طبی نظام سے استفادہ کرتے ہوئے اب ’’صحت کا انقلاب‘‘ لانے کا وقت آچکا ہے۔ ملک کے اولین آل انڈیا انسٹیٹیوٹ آف آیوروید کو یہاں قوم کے نام معنون کرنے کے بعد اجتماع سے خطاب میں وزیراعظم نے آج ’’یوم آیوروید‘‘ کے موقع پر غریبوں کے لئے واجبی اور آسانی سے قابل رسائی نگہداشت صحت کو یقینی بنانے پر زور دیا۔ آج کا دن سارے دن میں دھنونتری جینتی (دھنتیراس) کے طور پر بھی منایا جارہا ہے۔ مودی نے کہا کہ آیوروید کو وسعت دینے کی اشد ضرورت ہے کیونکہ یہ نہایت موثر اور آزمودہ طریقہ علاج ہے چنانچہ ملک کے ہر ضلع میں تمام تر ضروری سہولیات کے ساتھ آیوروید کا اچھا ہاسپٹل قائم ہونا چاہئے۔ وزارت آیوش اس معاملے میں تیزی سے سرگرم ہے اور زائد از تین سال میں 65 سے زیادہ آیوش ہاسپٹلس قائم کئے جاچکے ہیں۔ انہوں نے نشاندہی کی کہ دنیا میں فطری طریقہ علاج اور نگہداشت صحت کی طرف زیادہ سے زیادہ توجہ مبذول کی جارہی ہے، اس پس منظر میں ہندوستان کے پاس آیوروید کی بڑی ایسی طاقت موجود ہے جس کو زیادہ سے زیادہ فروغ دینا چاہئے۔ انہوں نے اس شعبہ کے ماہرین سے اپیل کی کہ ایسی ادویات ڈھونڈ نکالیں جو ایلوپیتھی کی مانند لوگوں کو فوری راحت پہنچا سکے اور کوئی ذیلی اثرات نہ ہوں۔ وزیراعظم نے تجویز رکھی کہ دنیا بھر میں اچھی صحت اور تندرستی کے لئے تگ و دو کو دیکھتے ہوئے آیوروید کا ماحول فروغ دینا اب زیادہ آسان ہے۔ انہوں نے آیوروید ادویات کو بہتر اور عصری انداز میں پیاکیجنگ سے متعارف کرانے پر بھی زور دیا۔ انہوں نے خانگی کمپنیوں سے اپیل کی کہ اپنی کارپوریٹ سماجی ذمہ داری کے فنڈس کا کچھ حصہ استعمال کرتے ہوئے آیوروید کے سسٹم کو تقویت پہنچانے میں مدد کریں۔ مودی نے کہا کہ ہم گزشتہ 30 سال میں آئی ٹی انقلاب دیکھ چکے ہیں۔ اب وقت آچکا ہے کہ آیوروید کے ذریعہ صحت کا انقلاب برپا کیا جائے۔ وزیراعظم نے اس موقع پر سوچھتا (صاف صفائی)کے موضوع پر بھی بات کی اور کہا کہ مرکزی حکومت نے 3 سال میں زائد از 5 کروڑ ٹائیلٹس بنائے ہیں۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT