Monday , December 18 2017
Home / شہر کی خبریں / ائمہ و موذنین کو اعزازیہ کی باقی اندرون ہفتہ اجرائی متوقع

ائمہ و موذنین کو اعزازیہ کی باقی اندرون ہفتہ اجرائی متوقع

ایک سال قبل کی اسکیم پر عمل آوری میں ایک سال مکمل
حیدرآباد۔ 13۔ جون ( سیاست نیوز) وقف بورڈکی جانب سے ائمہ اور مؤذنین کو ماہانہ اعزازیہ کے بقایہ جات اندرون ایک ہفتہ جاری کردیئے جائیں گے۔ تمام ڈسٹرکٹ میناریٹی ویلفیر آفیسرس کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ اندرون تین یوم اپنے ضلع کی موصولہ درخواستوں کے بارے میں وقف بورڈ کو رپورٹ روانہ کریں ۔ واضح رہے کہ گزشتہ سال رمضان المبارک کے موقع پر حکومت نے ائمہ اور مؤذنین کو ماہانہ اعزازیہ کی اسکیم کا اعلان کیا تھا لیکن ایک سال گزرنے کے باوجود آج تک اسکیم پر عمل آوری نہیں کی گئی۔ حیدرآباد ، محبوب نگر اور عادل آباد میں 50 فیصد درخواستوں کی یکسوئی کی گئی ہے جبکہ دیگر اضلاع میں اعزازیہ کی اجرائی کا ابھی تک آغاز نہیں ہوا۔ درخواست گزار ائمہ اور مؤذنین کو اعزازیہ کے لئے وقف بورڈ کے چکر کاٹتے ہوئے دیکھا جارہا ہے ۔ حکومت کی ناراضگی سے بچنے کیلئے اقلیتی بہبود کی جانب سے میناریٹی ویلفیر آفیسرس کو فوری رپورٹ روانہ کرنے کی ہدایت دی گئی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ دیگر اسکیمات کا بہانہ بناکر ائمہ اور مؤذنین کی درخواستوں کی جانچ نہیں کی گئی ۔ اضلاع میں بعض ائمہ اور مؤذنین کے بینک اکاونٹ غلط پائے جانے کی شکایات ملی ہیں۔ بتایاجاتا ہے کہ درخواستوں کے ادخال کے وقت کئی ائمہ اور مؤذنین نے غلط اکاؤنٹ نمبر درج کرایا جس کے باعث انہیں رقم منتقل نہیںکی جاسکتی۔ اب جبکہ اندرون ایک ہفتہ تمام درخواستوںکی یکسوئی کی ہدایت دی گئی ہے، ائمہ اور مؤذنین کو رمضان المبارک کے دوران بقایہ جات کے ساتھ یکمشت 10 تا 12 ہزار روپئے حاصل ہوں گے۔ اعزازیہ کے تحت ہر ماہ ایک ہزار روپئے کی ادائیگی کا فیصلہ کیا گیا اور گزشتہ سال جولائی میں یہ اسکیم شروع کی گئی تھی۔ ریاست بھر میں جملہ 8934 درخواستیں داخل کی گئیں جن میں ائمہ کی 4901 اور مؤذنین کی 4033 درخواستیں داخل کی گئیں۔ حکومت نے اسکیم کے تحت 5000 ائمہ اور 5000 مؤذنین کو اعزازیہ فراہم کرنے کا اعلان کیا تھا ۔

TOPPOPULARRECENT