Wednesday , December 19 2018

اتحاد کی سیاست کا دور ختم ‘ بی جے پی کو واضح اکثریت دی جائے

گونڈیا ( مہاراشٹرا ) 5 اکٹوبر ( سیاست ڈاٹ کام ) یہ واضح کرتے ہوئے کہ اتحادی سیاست کا دور اب ختم ہوگیا ہے وزیر اعظم نریندر مودی نے آج مہاراشٹرا کے عوام سے اپیل کی کہ وہ بی جے پی کو یہاں 15 اکٹوبر کو ہونے والے انتخابات میں واضح اکثریت فراہم کریں۔ انہوں نے این سی پی اور کانگریس پر ( جس کی متحدہ حکومت تین معیاد رہی ہے ) ریاست کو لوٹنے کا الزام ع

گونڈیا ( مہاراشٹرا ) 5 اکٹوبر ( سیاست ڈاٹ کام ) یہ واضح کرتے ہوئے کہ اتحادی سیاست کا دور اب ختم ہوگیا ہے وزیر اعظم نریندر مودی نے آج مہاراشٹرا کے عوام سے اپیل کی کہ وہ بی جے پی کو یہاں 15 اکٹوبر کو ہونے والے انتخابات میں واضح اکثریت فراہم کریں۔ انہوں نے این سی پی اور کانگریس پر ( جس کی متحدہ حکومت تین معیاد رہی ہے ) ریاست کو لوٹنے کا الزام عائد کرتے ہوئے مودی نے کہا کہ انتخابات میں دونوں ہی جماعتوں کو سبق سکھایا جانا چاہئے ۔ انہوں نے یہاں ایک انتخابی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اتحادی سیاست کا دور ختم ہوگیا ہے ۔ اگر آپ چاہتے ہیں کہ مہاراشٹرا ترقی کرے تو پھر ہمیں مکمل اکثریت فراہم کی جائے ۔

مودی نے پڑوسی مدھیہ پردیش اور چھتیس گڑھ ریاستوں کی مثال پیش کی جہاں رائے دہندوں نے بی جے پی کو مکمل اکثریت فراہم کی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مہاراشٹرا کو ملک میں نمبر ایک ریاست بنایا جاسکتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ این سی پی سربراہ شرد پوار نے پارلیمنٹ جانے راجیہ سبھا کا راستہ اختیار کیا لیکن لوک سبھا انتخابات میں پرفل پٹیل کو پیش کرتے ہوئے انہیں بلی کا بکرا بنایا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ مہاراشٹرا اسمبلی انتخابات میں مہاراشٹرا کی قسمت کا فیصلہ ہوجائیگا ۔ مودی نے ادعا کیا کہ ان کے اقتدار سنبھالنے کے بعد افراط زر کی شرح میں کمی ہوئی ہے اور حالیہ عرصہ میں پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں کمی آئی ہے ۔

انہو ںنے کہا کہ کانگریس اور این سی پی نے مہاراشٹرا کو تباہ کردیا ہے ۔دونوں برابر کے ذمہ دار ہیں اور دونوں کو سزا ملنی چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ اتر پردیش کے بعد سب سے زیادہ دہشت گردانہ حملے مہاراشٹرا میں ہوئے ہیں ۔ سب سے زیادہ فرقہ وارانہ فسادات مہاراشٹرا میں ہوئے ہیں۔ ماؤیسٹوں سے تشدد ترک کردینے اور قومی دھارے میں شامل ہوجانے کی اپیل کرتے ہوئے مودی نے ان سے کہا کہ وہ اپنے کندھوں سے بندوق اتاردیں اور ذمہ داری سنبھالیں ۔ انہوں نے کہا کہ نکسلائیٹس کو چاہئے کہ وہ تشدد ترک کرکے قومی دھارے میں شامل ہوجائیں۔ ملک کی ترقی میں شراکت دار بنیں ۔ تشدد کے ذریعہ کسی کو کامیابی نہیں ملی ہے ۔ انہوں نے سیاسی پنڈتوں سے کہا کہ وہ حالات کو دیکھیں اور سمجھیں کہ مہاراشٹرا میں بی جے پی قطعی اکثریت حاصل کرنے کی سمت رواں دواں ہے ۔

انہوں نے کہا کہ شرد پوار نے ریاست کے چیف منسٹر اور پھر مرکزی وزیر زراعت رہتے ہوئے ریاست کی کوئی بھلائی نہیں کی ۔ انہوں نے کہا کہ پوار وزیر زراعت تھے لیکن مہاراشٹرا میں 3700 کسانوں نے خود کشی کی ۔ کانگریس ۔ این سی پی حکومت نے ان کیلئے آنسو نہیں بہائے ۔ ایسی حکومت دوسری ریاستوں میں کہیں نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یہاں ایسے چیف منسٹر رہے ہیں جنہو ںنے ان ( مودی ) کے ساتھ اسٹیج پر بیٹھنا بھی گوارا نہیں کیا تو پھر مرکز ۔ ریاست کس طرح مل کر کام کرسکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس ۔ این سی پی کے دور میں مہاراشٹرا میں سب سے زیادہ فسادات ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ان سب کیلئے حکومت پر کوئی ذمہ داری عائد ہوتی ہے یا نہیں ؟ ۔ اس حکومت نے صرف ایک ہی کام کیا ہے اور وہ یہ ہے کہ اپنی جیبیں بھرلیں۔ ان کا عوام سے کوئی تعلق نہیں تھا ۔ اگرعوام چاہتے ہیں کہ مہاراشٹرا ترقی کرے تو بی جے پی کو مکمل اکثریت دینی چاہئے ۔ گونڈیا مدھیہ پردیش سے ملنے والا چاول کی پیداوار کا علاقہ ہے ۔

TOPPOPULARRECENT