Monday , December 11 2017
Home / ہندوستان / اترپردیش میں اپوزیشن لیڈر کی حکمران جماعت میں شمولیت

اترپردیش میں اپوزیشن لیڈر کی حکمران جماعت میں شمولیت

وزارتی عہدہ کے لیے بہوجن سماج پارٹی کو خیرآباد
لکھنو ۔ 22 ۔ جون : ( سیاست ڈاٹ کام) : اترپردیش میں بہوجن سماج پارٹی کو اس وقت شدید دھکا پہنچا جب سینئیر لیڈر سوامی پرساد موریہ نے پارٹی سے استعفیٰ دیدیا اور کہا کہ وہ پارٹی میں گھٹن محسوس کررہے تھے ۔ انہوں نے یہ الزام عائد کیا کہ پارٹی سربراہ مایاوتی آئندہ اسمبلی انتخابات کے لیے ٹکٹس کا ہراج کررہی ہے ۔ موریہ جو کہ ریاستی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر تھے بی ایس پی سے ترک تعلق کرلیا ہے اور یہ قیاس آرائیاں کی جارہی ہے کہ وہ عنقریب حکمراں سماج وادی پارٹی میں شمولیت اختیار کریں گے اور 27 جون کو کابینہ میں رد و بدل کے موقع پر انہیں وزیر بنایا جاسکتا ہے ۔ انہوں نے عجلت میں طلب کردہ پریس کانفرنس میں کہا کہ بی ایس پی میں میرا دم گھٹ رہا تھا اور مزید برقرار نہیں رہ سکتا ۔ انہوں نے یہ الزام عائد کیا کہ مایاوتی ، بڑے پیمانہ پر پارٹی ٹکٹس کا نیلام کررہی ہیں اور امیدواروں کا صحیح انتخاب نہیں کررہی ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT