Saturday , December 16 2017
Home / Top Stories / اترپردیش میں ’غنڈہ راج ‘سپریم کورٹ کی مداخلت

اترپردیش میں ’غنڈہ راج ‘سپریم کورٹ کی مداخلت

Barabanki: Prime Minister Narendra Modi at an election campaign rally at Barabanki district on Thursday.PTI Photo by Nand Kumar (PTI2_16_2017_000199b)

فتح پور میں وزیراعظم نریندر مودی کا بی جے پی کے انتخابی جلسہ سے خطاب

فتح پور ۔ 19فبروری ( سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی نے آج سماج وادی پارٹی حکومت پر یو پی میں نظم و ضبط برقرار رکھنے میں ’’ ناکام ‘‘ رہنے پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ وہاں پر ’غنڈہ راج ‘ چل رہا ہے ۔ یہاں تک کہ سپریم کورٹ کو بھی عصمت ریزی کے مبینہ معاملہ میں ایک ریاستی وزیر کے خلاف مقدمہ پر مداخلت کرنا پڑا ۔ سپریم کورٹ نے ہدایت دی کہ گائتری پرساد پرجا پتی کے خلاف ایف آئی آر درج کیا جائے ۔ انہوں نے انتخابی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یو پی پولیس نے کل داغدار وزیر کے خلاف ایف آئی آر درج کیا ۔ جب کہ سپریم کورٹ نے اسے اس کی ہدایت دی تھی ۔ انہوں نے کہا کہ اکھلیش یادو کے چہرے کی چمک دمک غائب ہوچکی ہے ‘ ان کی آواز کمزور پڑگئی ہے ۔ وہ خوفزدہ ہیں اور ذرائع ابلاغ کی باتوں اور الفاظ کا راست جائزہ لے رہے ہیں ۔ سماج وادی پارٹی کے صدر نے ’ تسلیم کرلیا ہے کہ وہ اس کھیل میں ہار چکے ہیں ‘ مودی نے سوال کیا کہ یو پی میں پولیس نظام بے عمل کیوں ہوگیا ہے ‘ انہیں نظم و ضبط کی صورتحال بہتر کرنے کی اقل ترین فکر کیوں نہیں ہے ۔ انہوں نے عوام پر زور دیا کہ اپنے تحفظ کیلئے وہ ایسی حکومت منتخب کریں جو ان کی محافظ ہو ۔ انہوں نے پرجاپتی کی انتخابی مہم میں چیف منسٹر کے جلسہ عام کا حوالہ دیتے ہوئے اظہار حیرت کیا کہ کیا ( کانگریس ۔ ایس پی ) اتحاد ایک مقدس اتحاد ہے ‘ اتنا ہی مقدس جتنا کہ گائتری ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ سماج وادی پارٹی کا کانگریس سے اتحاد سوشلسٹ قائد رام منوہر لوہیا کی توہین ہے ۔ راہول گاندھی پر تنقید کرتے ہوئے ان کا نام لئے بغیر مودی نے کہا کہ جو لوگ اپنے منہ میں چاندی کا چمچہ لئے پیدا ہوئے ہیں انہیں صورتحال کا اندازہ کیسے ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ 27 نشستوں کے بعد ’’ یو پی بے حال‘‘ کا نعرہ کانگریس نے ہی دیا تھا لیکن اب وہ شائد اسی وجہ سے سماج وادی پارٹی سے اتحاد کرنے پر مجبور ہوگئی ۔ وزیراعظم نے کہا کہ یو پی میں 10سال کی جلاوطنی کے باوجود یو پی اے نے ترقی کی ‘ مودی نے چیف منسٹر اور ان کے والد ملائم سنگھ پر بھی تنقید کی ۔

TOPPOPULARRECENT