Friday , December 15 2017
Home / Top Stories / اترپردیش میں کانگریس کی عوامی رابطہ مہم

اترپردیش میں کانگریس کی عوامی رابطہ مہم

سونیا اور راہول نے بس یاترا کو روانہ کیا
نئی دہلی، 23 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) کانگریس صدر سونیا گاندھی اور نائب صدر راہل گاندھی نے اترپردیش میں عوامی رابطہ بڑھانے اور پارٹی کا ووٹ بینک مضبوط کرنے کے لئے تین روزہ ‘بس یاترا’کو آج یہاں پارٹی ہیڈکوارٹر سے ہری جھنڈی دکھا کر روانہ کیا۔اتر پردیش میں اگلے سال ہونے والے اسمبلی انتخابات میں عوامی رابطہ مضبوط کرنے کے لے ”27 سال یوپی بے حال ” نعرے کے ساتھ تین دن کے دورے پر نکلی یہ صرف اتر پردیش کے غازی آباد ہوتے ہوئے 600 کلومیٹر کی دوری طے کر کے کانپور پہنچے گی۔اتر پردیش میں 27 سال تک غیر کانگریسی حکومتوں کی ناکامی کو اجاگر کرنے کے لئے پارٹی نے ’27 سال یوپی بے حال ‘کا نعرہ دیتے ہوئے اس مہم کا آغاز کیا ہے ۔ اس دوران ریاست میں حکومت کرنے والی بھارتیہ جنتا پارٹی، سماجوادی پارٹی اور بہوجن سماج پارٹی کی ناکامیوں کو گنایا جائے گا اور اور ریاست کے عوام کو بتایا جائے گا کہ غیر کانگریسی حکومتوں نے کس طرح سے ریاست کا برا حال کیا ہے ۔بس یاترا کے سلسلے میں مسٹر گاندھی بہت پرجوش ہیں۔ انہوں نے ٹویٹ کر کے کہا ”کانگریس کی مشترکہ ٹیم کو تین دن کی” بس یاترا”پر روانہ کیا گیا ہے ۔ اس یاترا کے دوران اترپردیش میں 27 سال کی غیر کانگریسی حکومتوں کی ناکامی کو اجاگر کیا جائے گا”۔ کانگریس کی اس مہم ‘بس یاترا’ میں پارٹی کے ریاستی انچارج جنرل سکریٹری غلام نبی آزاد، پردیش کانگریس صدر راج ببر، پردیش میں پارٹی کی وزیر اعلی کے عہدے کی امیدوار شیلا دکشت، ایم پی سنجے سنگھ، پرمود تیواری، پی ایل پنیا، آر پی این سنگھ، راجارام پال ، راجیش مشرا، بی پی چودھری، عمران مسعود اور پردیپ ماتھر سمیت کئی سینئر رہنماؤں کے ساتھ ہی ریاستی تشہیر کمیٹی کے رکن ظفر علی نقوی، جتن پرساد، عبدالمنان، گیادین انراگي اور چودھری وجیندر سنگھ بھی شامل ہوں گے ۔اس یاترا کے دوران پارٹی کے تمام بڑے لیڈر عوامی جلسوں کو بھی خطاب کریں گے ۔ یاترا بس غازی آباد، ہاپوڑ، مرادآباد، رام پور، بریلی، شاہ جہاں پور، ہردوئی اور قنوج ہوتے ہوئے کانپور پہنچے گی۔ ریاست کے 10 اضلاع سے ہوتے ہوئے کانگریس اس یاترا کے ذریعے 100 بلاکس کے لوگوں تک رسائی قائم کرے گی۔

TOPPOPULARRECENT