Friday , December 15 2017
Home / Top Stories / اتر پردیش میں ساتویں اور آخری مرحلے میں 61فیصد سے زائد پولنگ

اتر پردیش میں ساتویں اور آخری مرحلے میں 61فیصد سے زائد پولنگ

لکھنؤ، 8مارچ(سیاست ڈا ٹ کام) وزیر اعظم نریندر مودی کے پارلیمانی حلقہ وارانسی سمیت اترپردیش کے 7 اضلاع میں ریاستی اسمبلی انتخابات کے ساتویں اور آخری مرحلے کی پولنگ سخت سیکورٹی انتظامات کے درمیان آج صبح 7بجے شروع ہو گئی اور 61فیصد ووٹ ڈالے گئے۔ لکھنؤ میں انسداد دہشت گردی دستے (اے ٹی ایس) کی ایک دہشت گرد سے کل ہوئی مڈبھیڑ کی وجہ سے پولنگ مراکز پر خصوصی چوکسی برتی جا رہی ہے ۔ زیادہ تر پولنگ مراکز پر نیم فوجی دستوں کے جوان تعینات ہیں۔ پولنگ وزیر اعظم نریندر مودی کے پارلیمانی حلقہ وارانسی اور مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کے آبائی ضلع چندولي سمیت 7 اضلاع کی 40اسمبلی حلقوں میں ہو رہی ہے ۔پولنگ یوں تو 5بجے شام تک چلے گی لیکن نکسل متاثرہ سون بھدر، مرزا پور اور چندولی ضلع کے کئی مراکز پر پولنگ چار بجے ہی ختم ہو جائے گی۔ سپریم کورٹ کی ہدایت پر پہلی بار سون بھدر میں اسمبلی کی دو سیٹیں درج فہرست قبائل کے لیے مخصوص کی گئی ہیں۔ سون بھدر، مرزا پور اور چندولی میں خاص طور پر سکیورٹی فورسز کو چوکس رہنے کو کہا گیا ہے ۔اس مرحلے میں 1.41 کروڑ ووٹر اپنے حق رائے دہی استعمال کریں گے ، جن میں 64.76 لاکھ خواتین ہیں۔ کل 14،458 پولنگ بوتھ بنائے گئے ہیں۔ 2012 کے اسمبلی انتخابات میں ان 40 سیٹوں میں سے 23 ایس پی کے کھاتے میں گئی تھیں۔ بی ایس پی کو پانچ، بی جے پی کو چار، کانگریس کو تین اور دیگر کو پانچ سیٹیں ملی تھیں۔

TOPPOPULARRECENT