Friday , November 24 2017
Home / کھیل کی خبریں / اتنی جلدی ارجن ایوارڈ کی امید نہیں تھی : مندیپ

اتنی جلدی ارجن ایوارڈ کی امید نہیں تھی : مندیپ

کوچ اکھل کمار کی محنت رنگ لائی ۔ 22 سالہ باکسر کا باوقار ایوارڈ پر اظہار مسرت

نئی دہلی  16 اگسٹ ( سیاست ڈاٹ کام ) جاریہ سال ارجن ایوارڈ کیلئے منتخب ہونے والے واحد باکسر مندیپ جنگرا نے اپنے انتخاب پر انتہائی خوشی اور مسرت کا اظہار کیا ہے اور انہوں نے اس خیال کا اظہار کیا کہ انہیں یہ امید نہیں تھی کہ وہ اتنی جلدی اتنا طویل سفر طئے کرلیں گے حالانکہ ان کے ساتھیوں اور استاد سمجھے جانے والے اکھل کمار کو ان میں مکمل اعتماد تھا ۔ مندیپ سنگھ فی الحال اٹلی میں ہیں اور وہاں وہ مجوزہ ایشین چمپئن شپ کیلئے تربیت حاصل کر رہے ہیں۔ یہ ٹورنمنٹ جاریہ مہینے کے اواخر میں منعقد ہونے والی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ انہیں اس ایوارڈ کیلئے اپنے انتخاب پر خود سے زیادہ اپنے استاد کیلئے خوشی محسوس ہو رہی ہے ۔ مندیپ نے کہا کہ اکھل کمار نے ان میں ہمیشہ ہی دوسروں سے زیادہ بھروسہ اور اعتماد کا اظہار کیا تھا اور انہیں خوشی ہے کہ اکھل کمار کا بھروسہ اور یقین پورا ہوا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ انہیں امید نہیں تھی کہ کیرئیر کے اتنی جلدی انہیں اس ایوارڈ کیلئے منتخب کرلیا جائیگا تاہم چونکہ اکھل کمار اور ان کی شریک حیات نے ان کی بہترین کوچنگ کی تھی اس لئے وہ اچھی کارکردگی دکھانے کے قابل بنایا ہے ۔

انہوں نے خود بھی اپنے کیرئیر کے سلسلہ میں کافی محنت کی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کچھ لوگوں کا خیال تھا کہ وہ ( مندیپ ) اعلی ترین سطح پر اچھا مظاہرہ کرپائیں گے تاہم انہیں خوشی ہے کہ انہوں نے اپنے ناقدین کو غلط ثابت کردیا ہے اور اچھی کارکردگی دکھا رہے ہیں۔ اکھل کمار خود اچھے باکسر تھے اور دولت مشترکہ گیمس میں انہوں نے گولڈ میڈل جیتا تھا ۔ اس سے قبل انہیں بھی ارجن ایوارڈ حاصل ہوچکا تھا ۔ اکھل کمار نے 2005 سے مندیپ سنگھ کو ٹریننگ دے رہے ہیں جبکہ انہیں پونے میں منعقدہ ایک کیمپ میں مندیپ کی صلاحیتوں کا پتہ چلا تھا ۔ مندیپ سنگھ نے اب تک ایشیائی چمپئن شپ میں سلور میڈل جیتا تھا اور انہیں دولت مشترکہ کھیلوں میں بھی سلور میڈل حاصل ہوا ہے ۔ جاریہ سال 26 اگسٹ سے بنکاک میں ایشین چمپئن شپ کا آغاز ہونے والا ہے اور ویلٹر ویٹ 69 کیلوگرام کے زمرہ میں مندیپ سنگھ اپنی کارکردگی کو بہتر بنانے اور گولڈ میڈل حاصل کرنے کی کوشش کرینگے ۔ انہوں نے کہا کہ اس سال جب ان کا نام ارجن ایوارڈ کیلئے سفارش کیا گیا تھا تو انہیں خوف تھا کہ ایسا نہیں ہوگا تاہم انہیں بہت خوشی ہو رہی ہے کہ انہیں یہ ایوارڈ حاصل ہوا ہے اور خود ان سے زیادہ ان کے مینٹر کی خواہش اور کوششیں کامیاب رہی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT