Thursday , November 23 2017
Home / دنیا / اتوار کو پارلیمنٹ میں رائے دہی کے ذریعہ نئے وزیراعظم نیپال کا انتخاب

اتوار کو پارلیمنٹ میں رائے دہی کے ذریعہ نئے وزیراعظم نیپال کا انتخاب

کھٹمنڈو ۔ 9 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) نیپال کے نئے وزیراعظم کا انتخاب اتوار کے دن پارلیمنٹ میں رائے دہی کے ذریعہ ہوگا جبکہ سیاسی پارٹیاں اتفاق رائے پیدا کرنے سے قاصر رہیں۔ آج اعلان کیا گیا کہ مسلسل احتجاجوں اور ایک کلیدی سرحدی تجارتی مقام کی ناکہ بندی سے صورتحال ابتر ہوگئی ہے۔ ملک کے نئے دستور کے خلاف احتجاج جاری ہے۔ صدرنیپال ڈاکٹر رام برن یادو نے آج سیاسی پارٹیوں کو نئے وزیراعظم کے اکثریتی رائے دہی کے عمل کے ذریعہ انتخاب کے طریقہ کار کا آغاز کرنے کی ہدایت دی۔ صدر نے سیاسی پارٹیوں سے جو پارلیمنٹ میں نمائندگی رکھتی ہے کہا کہ وزیراعظم کا انتخاب اکثریتی رائے دہی کے ذریعہ ہوگا جس کی گنجائش نئے دستور میں فراہم کی گئی ہے۔ قطعی آخری مہلت گذرجانے پر بھی اتفاق رائے پیدا نہ ہونے پر رائے دہی کے ذریعہ وزیراعظم کا انتخاب کیا جاسکتا ہے۔ صدر نیپال کے دفتر سے اس کا اعلامیہ جاری کردیا گیا ہے۔ اسپیکر سبھاش نین بانگ نے کہا کہ وزیراعظم کے عہدہ کیلئے رائے دہی اتوار کی صبح منعقد کی جائے گی۔ سیاسی پارٹیاں اپنے امیدواروں کے نام پیش کرسکتی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT