Tuesday , January 23 2018
Home / سیاسیات / اجتماعی عصمت ریزی کی شکار لڑکی کو 18 سال بعد انصاف، کلیدی ملزم کو سزائے عمرقید

اجتماعی عصمت ریزی کی شکار لڑکی کو 18 سال بعد انصاف، کلیدی ملزم کو سزائے عمرقید

کوچی ۔ 4 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) سوریانیلی اجتماعی ریزی کا دلدوز واقعہ 18 سال قبل رونما ہوا تھا اور اتنے طویل عرصہ کے بعد عدالت کے ذریعہ فیصلہ سنایا جانا یقیناً ایک خوشگوار بات ہوسکتی ہے کیونکہ کیرالا ہائیکورٹ نے اجتماعی عصمت ریزی کے کلیدی ملزم دھرماراجن کو سزائے عمرقید کے علاوہ دیگر 23 ملزمین کی سزاؤں کو بھی برقرار رکھا ہے۔ اس حکمنامہ

کوچی ۔ 4 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) سوریانیلی اجتماعی ریزی کا دلدوز واقعہ 18 سال قبل رونما ہوا تھا اور اتنے طویل عرصہ کے بعد عدالت کے ذریعہ فیصلہ سنایا جانا یقیناً ایک خوشگوار بات ہوسکتی ہے کیونکہ کیرالا ہائیکورٹ نے اجتماعی عصمت ریزی کے کلیدی ملزم دھرماراجن کو سزائے عمرقید کے علاوہ دیگر 23 ملزمین کی سزاؤں کو بھی برقرار رکھا ہے۔ اس حکمنامہ کو جسٹس کے ٹی شنکرن اور ایم ایل جوزف پر مشتمل ایک خصوصی بنچ نے منظور کیا۔ یاد رہیکہ جس وقت اس دلدوز جرم کا ارتکاب کیا گیا،

متاثرہ لڑکی نابالغ تھی۔ ملزمین اسے کیرالا اور تملناڈو کے کئی مقامات پر لے گئے اور 40 دنوں تک 3000 کیلو میٹر کا سفر کیا، کہیں توقف کیا اور اس طرح 40 افراد اس کی مسلسل عصمت ریزی کرتے رہے۔ اس معاملہ میں 36 ملزمین تھے جن میں سے مقدمہ کے دوران پانچ ملزمین فوت ہوگئے جبکہ سات ملزمین کو بنچ نے بری کردیا تھا۔ عدالت نے تمام ملزمین کو 5 تا 13 سال کی سزائیں سنائیں اور 23 ملزمین پر جرمانے بھی عائد کئے۔

TOPPOPULARRECENT