Thursday , December 13 2018

اجتماعی عصمت ریزی کی متاثرہ خاتون زیر علاج، حالت مستحکم

نئی دہلی؍سوری؍ کولکتہ ۔/24جنوری، ( سیاست ڈاٹ کام ) سپریم کورٹ نے مغربی بنگال کے بربھوم ڈسٹرکٹ میں ایک قبائیلی خاتون کی 13افراد کے ذریعہ اجتماعی عصمت ریزی کے واقعہ کا سخت نوٹ لیا ہے اور ریاستی حکومت کو اس سلسلہ میں ایک نوٹس بھی جاری کی ہے۔ جیسے ہی تین ججس کی بنچ نے چیف جسٹس پی ستھیا سیوم کی قیادت میں سماعت کا آغاز کیا، اس واقعہ پر بنچ بھی

نئی دہلی؍سوری؍ کولکتہ ۔/24جنوری، ( سیاست ڈاٹ کام ) سپریم کورٹ نے مغربی بنگال کے بربھوم ڈسٹرکٹ میں ایک قبائیلی خاتون کی 13افراد کے ذریعہ اجتماعی عصمت ریزی کے واقعہ کا سخت نوٹ لیا ہے اور ریاستی حکومت کو اس سلسلہ میں ایک نوٹس بھی جاری کی ہے۔ جیسے ہی تین ججس کی بنچ نے چیف جسٹس پی ستھیا سیوم کی قیادت میں سماعت کا آغاز کیا، اس واقعہ پر بنچ بھی حیرت زدہ اور رنجیدہ ہوئے بغیر نہیں رہ سکی۔ اس بنچ میں جسٹس رنجن گوگوئی اور ایم وائی اقبال بھی شامل ہیں۔

انہوں نے ایک حکم نامہ منظور کرتے ہوئے بربھوم کے ڈسٹرکٹ جج کو ہدایت کی ہے کہ وہ عصمت ریزی کے مقام کا معائنہ کرتے ہوئے سپریم کورٹ کو اندرون ایک ہفتہ اپنی رپورٹ پیش کریں۔ یہاں اس بات کا تذکرہ ایک بار پھر ضروری ہے کہ 20 سالہ خاتون کی عصمت ریزی کا ’ حکم ‘ دراصل گاؤں میں موجود ایک ’’گنگارو عدالت‘‘ کے سربراہ ( سرپنچ ) نے دیا تھا کیونکہ پنچایت کے مطابق 20سالہ خاتون نے اپنی برادری سے باہر کے کسی نوجوان سے معاشقہ کرتے ہوئے فاش غلطی کی تھی جس کی سزا عصمت ریزی ہی ہوسکتی ہے۔ دوسری طرف پولیس نے آج عصمت ریزی کے تمام 13ملزمین کا تازہ ریمانڈ حاصل کرنے کی درخواست کی ہے۔ انہیں آج دو بجے دن عدالت میں پیش کیا گیا تھا۔ پبلک پراسیکیوٹر رنجیت گنگولی نے کہا کہ انہوں نے 13 ملزمین کے پولیس ریمانڈ کیلئے درخواست کا ادخال کیا ہے۔

دریں اثناء عصمت ریزی کی متاثرہ خاتون کی حالت مستحکم بتائی گئی ہے۔ سوری صدر ہاسپٹل میں اس کا علاج جاری ہے۔ گاؤں کی پنچایت نے خاتون پر اپنی برادری سے باہر کے نوجوان سے معاشقہ کرنے پر 50,000 روپئے کا جرمانہ عائد کیا تھا جو خاتون ادا کرنے سے قاصر تھی جس کا نتیجہ یہ ہوا کہ اس کی عصمت تار تار کردی گئی۔ ہاسپٹل کے سپرنٹنڈنٹ امیت بسواس نے بتایاکہ متاثرہ خاتون کی حالت ٹھیک ہے اور وہ غذا کا استعمال کررہی ہے جبکہ وزیر برائے بہبود خواتین و اطفال ششی پانجہ بھی ہاسپٹل پہنچ کر عیادت کریں گی۔

TOPPOPULARRECENT