Saturday , December 15 2018

احتجاجی مارچ پر ایم ڈی ایم کے سربراہ گرفتار

ویلورو (ٹاملناڈو ) ۔ 10 ۔ اپریل : (سیاست ڈاٹ کام ) : ایم ڈیایم کے سربراہ وائیکو کو حالیہ انکاونٹر کے خلاف پڑوسی ریاست آندھرا پردیش میں احتجاج سے باز رکھنے کے لیے ٹاملناڈو پولیس نے آج انہیں 1000 حامیوں کے ساتھ گرفتار کرلیا ۔ جب کہ وہ چتور کی سمت پیش قدمی کررہے تھے ۔ مسٹر وائیکو نے مطالبہ کیا کہ ضلع چتور میں فرضی انکاونٹر 20 ٹاملوں کی ہلاکت کے

ویلورو (ٹاملناڈو ) ۔ 10 ۔ اپریل : (سیاست ڈاٹ کام ) : ایم ڈیایم کے سربراہ وائیکو کو حالیہ انکاونٹر کے خلاف پڑوسی ریاست آندھرا پردیش میں احتجاج سے باز رکھنے کے لیے ٹاملناڈو پولیس نے آج انہیں 1000 حامیوں کے ساتھ گرفتار کرلیا ۔ جب کہ وہ چتور کی سمت پیش قدمی کررہے تھے ۔ مسٹر وائیکو نے مطالبہ کیا کہ ضلع چتور میں فرضی انکاونٹر 20 ٹاملوں کی ہلاکت کے ذمہ دار پولیس عہدیداروں کے خلاف قتل کیس درج کیا جائے اور اس واقعہ کی سپریم کورٹ جج کے ذریعہ تحقیقات اور انکاونٹر میں ہلاک لکڑہاروں کے افراد خاندان کو 20لاکھ روپئے معاوضہ ادا کیا جائے ۔ وہ تقریبا 1000 پارٹی کارکنوں کے ساتھ ویلورو سے 36 کلومیٹر دور چتور کی سمت سڑک کے راستہ جارہے تھے کہ پولیس نے حراست میں لے لیا گیا ۔۔
چتور انکاؤنٹر کی تحقیقات کا مطالبہ
چینائی 10 اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) ٹاملناڈو سے تعلق رکھنے والے مزدوروں کی آندھرا پردیش میں فرضی انکاؤنٹر میں ہلاکت کو حقوق انسانی کی خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے سابق چیف منسٹر ٹاملناڈو ایم کروناندھی نے اس کی عدالتی تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے ۔ انہوں نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ پولیس کی جانب سے 20 افراد کو گولی ماردئے جانے کا واقعہ پہلے کبھی پیش نہیں آیا تھا ۔ رپورٹس سے پتہ چلتا ہے کہ بے قصور مزدوروں کو رات کے وقت وہاں لایا گیا تھا۔

ٹاملناڈو میں احتجاج جاری
چینائی ۔ 10 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) آندھراپردیش میں پولیس کے ہاتھوں لکڑہاروں کی موت کے خلاف احتجاج ہنو ز جاری ہے جبکہ احتجاج چوتھے دن میں داخل ہوگیا ہے۔ احتجاجی مظاہرے ریل روکو احتجاج اور چیف منسٹر آندھراپردیش چندرا بابو نائیڈو کے پتلے جلانے کے کئی واقعات پیش آئے۔

TOPPOPULARRECENT