Sunday , November 19 2017
Home / Top Stories / احتجاجی مظاہروں پر صبروتحمل کے مظاہرہ کی ہدایت

احتجاجی مظاہروں پر صبروتحمل کے مظاہرہ کی ہدایت

حکومت جموں و کشمیر کا فوج اور پولیس کو مراسلہ، محبوبہ مفتی ۔ امیت شاہ ملاقات
سرینگر ؍ نئی دہلی ۔ 14 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) حکومت جموں و کشمیر نے آج پولیس اور دیگر صیانتی ارکان عملہ سے خواہش کی کہ احتجاجی مظاہروں سے نمٹنے اور شہری معاشرہ کو معمول پر لانے میں مدد دینے کیلئے احتجاجی مظاہروں سے نمٹنے کے دوران صبروتحمل سے کام لیں۔ کپواڑہ میں احتجاجیوں کے خلاف کارروائی کے دوران چار افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ دیہی ترقی کے وزیر عبدالحق خان ضلع کپواڑہ کے گڑبڑ زدہ علاقہ میں عارضی طور پر مقیم ہیں۔ کل شام انہوں نے مہلوکین کے ارکان خاندان سے ملاقات کی اور انہیں تیقن دیا کہ خاطیوں کو سزاء دلوائی جائے گی۔ انہوں نے ان کے ساتھ اظہاریکجہتی بھی کیا۔ بعدازاں انہوں نے علاقائی صورتحال کا جائزہ لینے کیلئے شہری اور پولیس انتظامیہ کے عہدیداروں کا ایک اعلیٰ سطحی اجلاس منعقد کیا۔ کشمیر خاص طور پر کھنڈواڑہ قصبہ ضلع کپواڑہ گذشتہ تین دن سے تین نوجوانوں اور ایک خاتون کی ہلاکت کے پیش نظر کشیدگی کا شکار ہے۔ نئی دہلی سے موصولہ اطلاع کے بموجب چیف منٹسر جموں و کشمیر محبوبہ مفتی نے آج قومی صدر بی جے پی امیت شاہ سے ملاقات کی۔ یہ جموں و کشمیر کی چیف منسٹر کا عہدہ سنبھالنے کے بعد ان کی اولین ملاقات تھی۔ بی جے پی کے ذرائع نے اسے خیرسگالی ملاقات قرار دیا۔ بی جے پی کے جنرل سکریٹری رام مادھو جو ریاست میں بی جے پی امور کے نگرانکار بھی ہیں، موقع پر موجود تھے۔ کل محبوبہ مفتی نے صدرجمہوریہ اور وزیراعظم کے علاوہ ایک مرکزی وزیر سے بھی ملاقات کی تھی۔ چیف منسٹر بننے کے بعد یہ ان کا اولین دورہ دہلی تھا۔ سرینگر سے موصولہ اطلاع کے بموجب جموں و کشمیر میں آج مسلسل دوسرے دن بھی کرفیو جیسی تحدیدات دیکھی گئیں۔ آج بعض علاقوں میں انٹرنیٹ خدمات معطل کردی گئیں اور وادی کشمیر میں کشیدہ صورتحال دیکھی گئی۔ قصبہ کپواڑہ، کرال گنڈ ، ہنواڑہ، ماگم اور لانگیٹ کے علاقوں میں سخت کشیدگی پھیلی ہوئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT