Friday , January 19 2018
Home / شہر کی خبریں / احساس کمتری کا شکار ایک شخص کے ہاتھوں تین کمسن لڑکیوں کا قتل

احساس کمتری کا شکار ایک شخص کے ہاتھوں تین کمسن لڑکیوں کا قتل

نظام آباد :20؍ فروری (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) احساس کمتری میں مبتلا ایک شخص نے اپنے رشتہ دار کے تین کمسن لڑکیوں کا قتل کرتے ہوئے نذرآتش کردیااور یہ لاپتہ ہوگیا ۔ یہ واقعہ کل رات شہر نظام آباد کے رورل پولیس اسٹیشن کے حدود میں واقع سدھیرریڈی انجینئرنگ کالج کے علاقہ میں پیش آیا۔ تفصیلات کے بموجب ضلع نظام آباد کے رنجل منڈل کے دوپلی کوآپ

نظام آباد :20؍ فروری (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) احساس کمتری میں مبتلا ایک شخص نے اپنے رشتہ دار کے تین کمسن لڑکیوں کا قتل کرتے ہوئے نذرآتش کردیااور یہ لاپتہ ہوگیا ۔ یہ واقعہ کل رات شہر نظام آباد کے رورل پولیس اسٹیشن کے حدود میں واقع سدھیرریڈی انجینئرنگ کالج کے علاقہ میں پیش آیا۔ تفصیلات کے بموجب ضلع نظام آباد کے رنجل منڈل کے دوپلی کوآپریٹیو سوسائٹی کے صدر و سابق ضلع پریشد کے رکن و کسان لیڈر رگھو پتی ریڈی نے عرصہ دراز قبل اپنی سالی کے لڑکے کی پرورش کی اور اپنے بیٹے کی طرح اسے پال پوس کر بڑھا کیا۔ رگھو پتی ریڈی کو 3لڑکے ہیں ان میں گنگاریڈی ، سائی ریڈی اور راج ریڈی شامل ہیں اور تینوں کو ایک ایک لڑکی سریشا 9سالہ ، اکشیا 7 سالہ اور کوشی 6سالہ ہے کل نظام آباد کے سری لکشمی منیشن میں ایک شادی کی تقریب میں شرکت کرنے کیلئے آئے ہوئے تھے نریندرریڈی نے کل شام7:30 بجے چاکلیٹ دلانے کے بہانے ان تین لڑکیوں کو لیکر گیا اور رات دیر گئے تک بھی واپس نہ لوٹنے پر رگھو پتی ریڈی اور ان کے افراد خاندان لڑکیوں کے بارے میں پریشان تھے کہ نریندرریڈی نے فون پر اطلاع دیتے ہوئے بتایا کہ تینوں لڑکیاںمیرے پاس ہیں اور میں باسر کی ندی کے پاس ہوں خودکشی کررہا ہوں اس بات کی اطلاع ملتے ہی رگھو پتی ریڈی نے فوری پولیس عہدیداروں کو اطلاع دی اور باسر ندی کے پاس پہنچ کر دیکھا تو رگھو پتی ریڈی کی کار، کپڑے اور گھڑی دستیاب ہوئیں۔ فوری تیراکوں کو طلب کرتے ہوئے ندی میں تلاش کیاگیا لیکن رگھو پتی ریڈی کی نعش یا لڑکیوں کی نعشیں دستیاب نہیں ہوئی جس پر سارے افراد خاندان پریشانی میں مبتلا تھے اور پولیس انتظامیہ اس بارے میں خصوصی ٹیم تشکیل دیتے ہوئے تحقیقات کا آغاز کردیا تھا کہ رورل پولیس اسٹیشن کے علاقہ میں واقع دوپلی کے کسانوں نے پولیس کو اطلاع دی کہ جھلسی ہوئی3کمسن لڑکیوں کی نعشیں ہے

جس پرفوری رورل پولیس ایس ایچ او سرینواس ریڈی یہاں پہنچ کر حالات کا جائزہ لیا اور رگھو پتی ریڈی کے افراد خاندان کو اطلاع دینے پر رگھو پتی کے افراد خاندان نے نعشوں کی نشاندہی کی اطلاع کے ملتے ہی ڈی آئی جی نظام آباد رینج سوریہ نارائنا، ضلع ایس پی ترون جوشی، ٹرینی آئی پی ایس وجئے کمار، ڈی ایس پی نظام آباد انیل کمار اور دیگر نے مقام حادثہ پر پہنچ گئے رگھوپتی ریڈی کے خاندان میں شادی کی تقریب ہونے کی وجہ سے ان کے رشتہ دار بڑے پیمانے پر آئے ہوئے تھے اور یہ سارے افراد مقام حادثہ پر پہنچ کر بے تحاشہ رونا شروع کردیا پولیس نے اس بارے میں تحقیقات کا آغاز کردیا۔ پردیش کانگریس کے سابق صدرو ایم ایل سی مسٹر ڈی سرینواس کو اس بات کی اطلاع ملنے پر ڈی آئی جی نظام آباد رینج سے فون پر ربط پیدا کیا اورقاتل کو سخت سے سخت سزا دینے کی خواہش کی ۔ جبکہ ٹی آرایس کے رکن اسمبلی ہریش رائو اور صدر ریاستی مہیلا کانگریس آکولہ للیتا نے بھی اس واقعہ پر شدید رنج و غم کا اظہارکیا ۔ پی ڈی ایس او اور مہیلا سنگموں کی سمبانی لتا، نورجہاں اور دیگر نے بھی احتجاج کیا اور قاتل کے علامتی پتلہ کو نذرآتش کیا۔

TOPPOPULARRECENT