Monday , November 19 2018
Home / شہر کی خبریں / ادارہ سیاست کے رشتوں کے دو بہ دو پروگرام کو اضلاع اور دیگر ریاستوں میں بھی منعقد کرنے پر زور

ادارہ سیاست کے رشتوں کے دو بہ دو پروگرام کو اضلاع اور دیگر ریاستوں میں بھی منعقد کرنے پر زور

رائیل ریجنسی گارڈن میں قریشی برادری کے رشتوں کا پروگرام، جالنہ خورشید حسین اور دیگر کا خطاب

حیدرآباد ۔ 3 نومبر (سیاست نیوز) سیاست اور ملت فنڈ بہ تعاون و اشتراک قریشی ایجوکیشنل اینڈ ویلفیر سوسائٹی کے زیراہتمام دوسرا اور 90 واں دو بہ دو ملاقات پروگرام قریشی برادری کیلئے آج رائیل ریجنی گارڈن فنکشن ہال، آصف نگر روڈ منعقد ہوا جس میں قریشی برادری سے تعلق رکھنے والے والدین اور سرپرستوں نے شرکت کی۔ پروگرام کا آغاز ماسٹر ابوبکر کی قرأت و انگریزی ترجمانی سے ہوا۔ شہ نشین پر جالنہ خورشید حسین صدر جمعیتہ القریش سکندرآباد، محمد عارف قریشی کانگریس لیڈر، محمد اسحاق المعروف شاعر، محمد مخدوم ہوٹل یوسفیہ، عبدالرشید چھاؤنی، محمد افضل سرونگر، محمد جہانگیر نارسنگی، محمد برہان نورنکے، محمد حسین نورنکے، محمد امجد جالنہ کے علاوہ جناب الیاس باشاہ، میر انورالدین، سید ناظم الدین، محمد احمد، صالح بن عبداللہ باحاذق، محمد فاروق اور دوسرے موجود تھے۔ محمد سلیم نورنکے نے والدین و سرپرستوں کا خیرمقدم کیا اور کہا کہ اس سے قبل بھی قریشی برادری کی جانب سے اس طرح کے پروگرام شہر میں منعقد کئے گئے تھے جس کے ثمرآور نتائج سامنے آئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جناب زاہد علی خاں اور جناب ظہیرالدین علی خان سیاست عملہ کی یہ کوشش کہ پروگرام کے ذریعہ رشتوں کو آسان بنایا جائے جس کی وجہ سے قریش برادری نے بھی رجوع ہوکر شادیوں کو آسان اور رشتوں کے تلاش میں پروگرام منعقد کرنے کی خواہش کا اظہار کیا تھا جس کو ادارہ سیاست نے قبول کیا اور گذشتہ منعقدہ پروگرام کے ذریعہ رشتوں کے انتخاب میں آسانی پیدا ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کے رشتوں کے پروگرام کو وسعت دینے کی شدید ضرورت ہے تاکہ جو والدین بے چین ہیں انہیں آسانیاں پیدا ہوسکے۔ الحاج خورشید حسین صدر جمعیتہ القریش سکندرآباد نے سیاست کے اس پروگرام کی ستائش کی اور کہا کہ انہوں نے موجودہ سلگتے ہوئے مسئلہ کو حل کرنے کے ساتھ اس میں آسانی فراہم کرتے ہوئے ایک ہی چھت تلے رشتوں کی جو سہولت مہیا کی ہے وہ قابل قدر ہے۔ انہوں نے کہا کہ آج کئی لڑکیاں لین دین کی وجہ سے بن بیاہی بیٹھی ہوئی ہیں۔ میر انورالدین نے پروگرام کی ستائش کی اور کہا کہ قریشی برادری کے یہ پروگرام ہر ضلع میں اہتمام کی ضرورت ہے۔ انہوں نے جناب زاہد علی خان ایڈیٹرسیاست اور جناب ظہیرالدین علی خان منیجنگ ایڈیٹر روزنامہ سیاست کی کاوشوں کی سراہنا بھی کی کہ جنہوں نے شادیوں کے مسئلہ کو آسان بنانے اور رشتوں کی تلاش میں پروگرامس مسلسل منعقد کررہے ہیں۔ پروگرام میں والدین کی پروگرام کو دونوں شہروں کے مزید مقامات اور اضلاع میں بھی منعقد کرنے پر زور دیا۔ انہوں نے عادل آباد کے ایک وفد جو خصوصی طور پر پروگرام سے متاثر ہوکر اور اپنے لڑکی کی شادی کے رشتہ کیلئے آئے محمد فاروق قریشی، محمد آصف نے ملاقات کی اور اس طرح کے پروگرام کو اضلاع میں منعقد کرنے پر زور دیا۔ مہاراشٹرا کے مسلمان بھی اس سے استفادہ کرسکیں گے۔ اس کے علاوہ جناب محمد فریدالدین قریشی، جانی میاں کارپوریٹر نے شرکت کی اور نیک تمناؤں کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ یہ پروگرام لڑکوں اور لڑکیوں کے رشتوں اور والدین کی پریشانیوں کو دور کرنے میں بڑا معاون و مددگار ثابت ہورہا ہے۔ 11 بجے دن رجسٹریشن کا آغاز ہوا جس میں والدین نے لڑکوں اور لڑکیوں کے 50 بائیو ڈاٹاس رجسٹریشن کروائے اور خاص بات یہ دیکھی گئی کہ والدین کی آپسی بات چیت کے بناء دو رشتے طئے پائے۔ قریش برادری سے تعلق رکھنے والے والدین کیلئے دفتر روزنامہ سیاست (عابڈز) پر صبح 10 تا 5 بجے شام سہولت رہے گی کہ وہ بائیو ڈاٹاس اور فوٹوز کا ملاحظہ کرسکتے ہیں۔ رجسٹریشن کاؤنٹر پر امتیاز ترنم خان، سیما، رمزا اور آمنہ بیگم نے بائیو ڈاٹاس اور فوٹوز کو رجسٹریشن کیا۔ قریشی برادری کے اس دو بہ دو پروگرام میں محمد سلیم نورنکے نے کارروائی چلائی۔

TOPPOPULARRECENT