اذان اسکول کی کشادگی تا حکم ثانی معطل

محکمہ تعلیم کی جانب سے نوٹس وجہ نمائی کی اجرائی
واقعہ کی تفصیلی رپورٹ اور انتظامیہ کے جواب کا جائزہ
حیدرآباد۔18ستمبر(سیاست نیوز) اذان انٹرنیشنل اسکول معاملہ میں محکمہ تعلیم نے سخت کاروائی کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور تا حکم ثانی اسکول کی کشادگی کو معطل رکھنے کی ہدایت دی ہے۔ ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر مسز وینکٹا نرسما نے بتایا کہ اسکول کو نوٹس وجہ نمائی جاری کرکے دریافت کیا گیا تھا کہ معصوم طالبہ کی عصمت ریزی کے سنگین واقعہ کے بعد اسکول کی مسلمہ حیثیت کیوں نہ ختم کردی جائے! انہوں نے بتایا کہ وجہ نمائی نوٹس کے علاوہ ڈپٹی انسپکٹر آف اسکول اور ڈپٹی ڈی ای او کی رپورٹس موصول ہوئی ہیں اور محکمہ تعلیم کی جانب سے رپورٹس و اسکول کے جواب کا جائزہ لیا جارہا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ اسکول کے جواب کا جائزہ لینے بعد اسکول کی مسلمہ حیثیت کو ختم کرنے کے متعلق فیصلہ کیا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ اس سنگین واقعہ کے بعد سے اب تک کی صورتحال پر محکمہ تعلیم کی کڑی نظر ہے اور اسکول کی جانب سے 19ستمبر سے اسکول کی کشادگی کے اعلان کے فوری بعد محکمہ تعلیم نے انتظامیہ کو تا حکم ثانی اسکول میں کلاسس شروع نہ کرنے کی ہدایت دی کی ہے۔ اسکول میں اس واقعہ کے بعد محکمہ تعلیم کے منڈل سطح کے عہدیداروں کی جانب سے معاملہ کو رفع دفع کرنے کی کوشش کے الزامات عائد کئے جارہے تھے ۔ان الزامات کے بعد اعلی عہدیدادروں نے مداخلت کرکے نوٹس جاری کی ۔ عہدیداروں نے بتایا کہ اسکول کے حدود میں طلبہ کے تحفظ کو یقینی نہ بنانے پر محکمہ کو اختیار حاصل ہے کہ وہ اسکول کی مسلمہ حیثیت کو برخواست کرکے طلبہ کو دیگر اسکولوں میں منتقل کرنے اقدامات کرے۔باوثوق ذرائع کے مطابق ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر‘ ریجنل جوائنٹ ڈائریکٹر اور کلکٹر حیدرآباد کی جانب سے واقعہ کے ساتھ اسکول انتظامیہ کے جواب کا جائزہ لینے سہ رکنی کمیٹی تشکیل دی جائیگی اور اندرون دو یوم کمیٹی کی رپورٹ کے مطابق ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر اور آر جے ڈی کی نگرانی میں اسکول کے خلاف کاروائی کو یقینی بنایا جائیگا۔

TOPPOPULARRECENT