Sunday , November 19 2017
Home / جرائم و حادثات / اراضیات معاملت میںجبراً وصولی ، 4 پولیس عہدیداروں کیخلاف مقدمہ

اراضیات معاملت میںجبراً وصولی ، 4 پولیس عہدیداروں کیخلاف مقدمہ

ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر پولیس پولیندر ریڈی اور دیگر تین عہدیداروں کے خلاف تحقیقات

حیدرآباد ۔ /13 اگست (سیاست نیوز) اراضیات معاملت کی جبراً وصولی میں ملوث 4 پولیس عہدیداروں کے خلاف سائبر آباد پولیس نے ایک مقدمہ درج کرلیا ہے ۔ تفصیلات کے بموجب نارسنگی کے ساکن خضر بن ابوبکر نے کمشنر پولیس سائبر آباد مسٹر سندیپ شنڈالیہ سے ایک شکایت درج کروائی جس میں انہوں نے بتایا کہ سائبر آباد کے ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر پولیس ٹی پولیندر ریڈی کی بیٹی ایشوریا ریڈی اور عبداللہ نامی پارٹنرس کے ہمراہ ضلع سنگاریڈی کے متنگی علاقہ میں 2.7 ایکر اراضی خریدی تھی اور اس سلسلے میں اراضی کے مالک سے ایک معاہدہ بھی کیا گیا تھا جو پیشہ سے کسان ہے ۔ شکایت میں بتایا گیا کہ بطور پیشگی 10 لاکھ روپئے کسان کو ادا کئے گئے تھے اور بقایہ ایک کروڑ روپئے اندرون 45 دن میں ادا کرنے کا وعدہ کیا تھا ۔ مقررہ وقت میں اراضی خریدنے میں ناکام ہونے کے سبب کسان نے اپنی اراضی کو دیگر دو افراد گنگادھر ریڈی اور رویندر ریڈی کو فروخت کردیئے تھے ۔ کچھ دن بعد پولیندر ریڈی نے مبینہ طور پر ابوبکر کو یہ کہکر ہراساں کرنا شروع کردیا جس میں بتایا کہ ان کی بیٹی ایشوریا ریڈی کو دھوکہ دیا ہے اور اراضی کے مالک کو دیگر افراد کو فروخت کرنے کا موقع فراہم کیا ۔ ابوبکر نارسنگی کا مقیم ہونے کے باوجود اس کے خلاف مسٹر پولیندر ریڈی نے رائے درگم پولیس اسٹیشن میں ایک مقدمہ درج کروایا تھا اور جولائی 26 کو رائے درگم پولیس اسٹیشن میں ابوبکر سے چیکس اور دیگر دستاویزات پر جبراً دستخطیں لی گیئں ۔ بتایا جاتا ہے کہ 60 لاکھ کے چیکس پر پولیس رائے درگم نے دستخط حاصل کی تھی ۔ ابوبکر نے کمشنر پولیس سائبر آباد کو /12 اگست کو ایک شکایت کی اور 4 پولیس عہدیداروں کے خلاف مقدمہ درج کرنے کی گزارش کی جس پر کمشنر پولیس نے فی الفور کارروائی کرتے ہوئے ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر پولیس مسٹر پولیندر ریڈی ، انسپکٹر رائے درگم درگا پرساد ، سب انسپکٹر راج شیکھر اور پولیس کانسٹبل لکشمی نارائینا کے خلاف جبراً وصولی اغواء اور دیگر دفعات کے تحت ایک مقدمہ درج کیا گیا ہے اور اسسٹنٹ کمشنر پولیس مادھا پور مسٹر رمناکمار کو اس کیس کا تحقیقاتی عہدیدار مقرر کیا گیا ہے ۔ اس کیس کی تحقیقات سائبر آباد پولیس کمشنر کی راست نگرانی میں کیا جارہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT