Friday , December 15 2017
Home / شہر کی خبریں / اراضیات کو باقاعدہ بنانے کی 72 ہزار درخواستوں کی یکسوئی

اراضیات کو باقاعدہ بنانے کی 72 ہزار درخواستوں کی یکسوئی

ایچ ایم ڈی اے کی خصوصی مہم ، ہنوز ایک لاکھ 61 ہزار درخواستیں زیر التواء
حیدرآباد۔27ستمبر(سیاست نیوز) حیدرآباد میٹرو پولیٹین ڈیولپمنٹ اتھاریٹی نے جاریہ ماہ کے دوران اراضیات کو باقاعدہ بنانے کی 72ہزار درخواستوں کی یکسوئی کردی ہے اور تیزی سے درخواستوں کی یکسوئی کا عمل جاری ہے۔ اراضیات کو باقاعدہ بنانے کے سلسلہ میں 21ستمبر سے ایچ ایم ڈی اے کی جانب سے شروع کردہ خصوصی مہم کے دوران ان درخواستوں کی یکسوئی عمل میں لائی گئی ہے وار مابقی درخواستوں کی یکسوئی کے سلسلہ میں ان کا جائزہ لیا جارہا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ آئندہ چہارشنبہ تک حیدرآباد میٹروپولیٹین ڈیولپمنٹ اتھاریٹی کی جانب سے خصوصی مہم چلاتے ہوئے درخواستوں کی یکسوئی انجام دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ عہدیداروں نے بتایا کہ ایچ ایم ڈی اے کے پاس جملہ 1لاکھ 75ہزار 298 درخواستیں زیر التواء ہیں جن میں 1لاکھ 61ہزار 515 درخواستیں 15اکٹوبر2015 کے بعد شروع کردہ ایل آر ایس اسکیم میں داخل کی گئی ہیں جبکہ 13 ہزار 783ایسی درخواستیں ہیں جو کہ اس سے پہلے سے اتھاریٹی میں زیر التواء رہی ہیںجو 2008 میں شروع کی گئی اسکیم میں داخل کی گئی تھیں لیکن اب ایچ ایم ڈی اے کی جانب سے ان تمام درخواستوں کی یکسوئی کے لئے اقدامات کئے جا رہے ہیں۔ کمشنر حیدرآباد میٹرو پولیٹین ڈیولپمنٹ اتھاریٹی مسٹر ٹی چرنجیولو نے بتایا کہ تاحال 72 ہزار درخواستوں کومنظوری فراہم کرتے ہوئے ان کی یکسوئی کردی گئی ہے جبکہ 35ہزار درخواستوں کو مسترد کردیا گیا ہے۔ انہوں نے مسترد کی گئی درخواستوں کی تفصیلات سے واقف کرواتے ہوئے کہا کہ دستاویزات کی کمی اور مختلف وجوہات کی بناء پر 35ہزار درخواستوں کو یکسر مسترد کر دیا گیا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ مابقی درخواست گذاروں کو ہدایت جاری کی گئی ہے کہ وہ ان درخواستوں کو پیش کرے جو کم ہیں اور درکار فیس کی ادائیگی کو ممکن بنائیں بصورت دیگر ان درخواستوں کو بھی مسترد کردیا جائے گا کیونکہ حیدرآباد میٹرو پولیٹین ڈیولپمنٹ اتھاریٹی نے تمام زیر التواء درخواستوں کی یکسوئی کے سلسلہ میں عاجلانہ اقدامات کا فیصلہ کیا ہے اور اس فیصلہ پر مثبت عمل آوری کے لئے درخواست گذاروں کا بھی فوری حرکت میں آنا ضروری ہے اگر درخواست گذاروں کی جانب سے معاملہ کو طول دینے کی کوشش کی جاتی ہے تو ایسی صورت میں ان درخواستوں کو مسترد کردیا جائے گا ۔ کمشنر ایچ ایم ڈی اے نے کہا کہ یکم اکٹوبر تک اراضیات کو باقاعدہ بنانے کے لئے داخل کردہ تمام درخواستوں کی یکسوئی کو ممکن بنایا جائے گا کیونکہ ماہ جون کے دوران حیدرآباد میٹروپولیٹین ڈیولپمنٹ اتھاریٹی نے ریاستی حکومت سے ان امور کی تکمیل کیلئے 5ماہ کا وقت حاصل کیا تھا جو کہ قریب الختم ہے۔

TOPPOPULARRECENT