Saturday , December 16 2017
Home / شہر کی خبریں / اراضی سروے کے دوران وقف اراضیات کے تحفظ کی مساعی

اراضی سروے کے دوران وقف اراضیات کے تحفظ کی مساعی

چیرمین تلنگانہ وقف بورڈ محمد سلیم کی چیف سکریٹری ایس پی سنگھ سے نمائندگی
حیدرآباد ۔ 25۔ ستمبر (سیاست نیوز) حکومت کے جاریہ اراضی سروے میں اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کیلئے ضلع کلکٹرس کو ضروری ہدایات جاری کرنے صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم نے چیف سکریٹری ایس پی سنگھ سے خواہش کی ہے۔ انہوں نے چیف سکریٹری سے ملاقات کرتے ہوئے اوقافی اراضیات کے تحفظ کے سلسلے میں بات چیت کی۔ چیف اگزیکیٹیو آفیسر ایم اے منان فاروقی کے ہمراہ تفصیلی یادداشت چیف سکریٹری کو پیش کی گئی اور ساتھ میں اضلاع میں موجود اوقافی اراضیات کی تفصیلات بھی حوالے کی گئیں۔ چیف سکریٹری نے کہا کہ وقف اور انڈومنٹ کی اراضیات کا سروے دوسرے مرحلہ میں کیا جائے گا ۔ انہوں نے مشورہ دیا کہ وقف اراضیات کا مکمل ریکارڈ مواضعات کے سطح پر سروے ٹیموں کے حوالے کیا جائے۔ صدرنشین وقف بورڈ نے تیقن دیا کہ اندرون دو یوم ریکارڈ کی تفصیلات چیف سکریٹری کے علاوہ اضلاع کو روانہ کردی جائیں گی۔ انہوں نے کہا کہ بورڈ کے ملازمین کی خصوصی ٹیمیں تشکیل دی جارہی ہیں۔ صدرنشین وقف بورڈ نے ملازمین کی ضرورت سے واقف کرایا اور کہا کہ بورڈ میں موجودہ ملازمین کی تعداد ناکافی ہے۔ چیف سکریٹری نے اس سلسلے میں تفصیلات پیش کرنے کی ہدایت دی۔ صدرنشین اور چیف اگزیکیٹیو آفیسر نے چیف منسٹر کے سکریٹری بھوپال ریڈی سے ملاقات کرتے ہوئے انہیں بھی تفصیلات سے آگاہ کیا۔ بھوپال ریڈی نے بورڈ میں 50 سے زائد اٹینڈرس کی موجودگی پر حیرت کا اظہار کیا اور کہا کہ زائد اٹینڈرس کو دیگر اقلیتی اداروں میں منتقل کیا جائے گا ۔ محمد سلیم نے کہا کہ وقف بورڈ کے پاس اراضیات کے سلسلہ میں جو ریکارڈ دستیاب ہے وہ ہر ضلع میں عہدیداروں کے ذریعہ ضلع کلکٹرس کو روانہ کیا جائے گا اور ضلع کلکٹرس کو چاہئے کہ وہ اس ریکارڈ کی بنیاد پر مواضعات میں جانے والی سروے ٹیموں کو ہدایت دیں کہ اوقافی اراضیات ریونیو ریکارڈ میں شامل کی جائیں۔ صدرنشین وقف بورڈ نے ضلع کلکٹرس کو ہدایات جاری کرنے کیلئے ویڈیو کانفرنس کے انعقاد کی تجویز پیش کی۔ چیف سکریٹری نے تیقن دیا کہ وہ اس سلسلہ میں مناسب وقت پر ویڈیو کانفرنس کا اہتمام کرتے ہوئے اوقافی اراضیات کے تحفظ کے سلسلہ میں رہنمایانہ خطوط جاری کریں گے ۔ انہوں نے کہا کہ سروے کے انعقاد کا مقصد ریاست کی تمام اراضیات کی نشاندہی کرنا ہے تاکہ مستقبل میں تنازعات سے بچا جاسکے۔ صدرنشین وقف بورڈ نے کہا کہ تمام وقف انسپکٹرس کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ سروے ٹیموں کے ساتھ اشتراک کرتے ہوئے اوقافی اراضیات کی نشاندہی کرے۔ انہوں نے کہا کہ ریونیو عہدیداروں سے تعاون حاصل کرنے کیلئے ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی سے نمائندگی کی جاچکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وقف بورڈ جاریہ سروے سے مکمل استفادہ کرتے ہوئے اپنی اراضیات کے تحفظ کو یقینی بنائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اراضیات کے تحفظ کے ذریعہ بورڈ کی آمدنی میں اضافہ کیا جائے گا۔ محمد سلیم نے سروے سے استفادہ کے سلسلہ میں وقف بورڈ کے ارکان اور عہدیداروں پر مشتمل کمیٹی تشکیل دی ہے، جو وقتاً فوقتاً اوقافی اراضیات کی ریونیو ریکارڈ میں شمولیت کا جائزہ لے گی ۔ ضرورت پڑنے پر یہ کمیٹی اضلاع کا دورہ کرتے ہوئے ضلع کلکٹرس سے نمائندگی کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے تیقن دیا ہے کہ سروے میں اوقافی اراضیات کا مکمل تحفظ کیا جائے گا۔ نظام دور حکومت کے بعد پہلی مرتبہ اس طرح جامع سروے کا اہتمام کیا جارہا ہے۔ انہوں نے اضلاع سے تعلق رکھنے والے مسلمانوں اور مسلم تنظیموں سے اپیل کی کہ اوقافی اراضیات کی نشاندہی کے لئے آگے آئیں۔

TOPPOPULARRECENT