Thursday , December 14 2017
Home / شہر کی خبریں / اراضی نہ ملنے پر مایوس خودسوزی کرنے والا نوجوان فوت

اراضی نہ ملنے پر مایوس خودسوزی کرنے والا نوجوان فوت

ٹی آر ایس رکن اسمبلی کے دفتر کے روبرو انتہائی اقدام ، اپوزیشن کا احتجاج
کریم نگر۔ 24 ستمبر (پی ٹی آئی) اراضیات کی تقسیم کی اسکیم میں مبینہ رشوت ستانی کے خلاف منا کندور کے ٹی آر ایس رکن اسمبلی کے دفتر کے روبرو احتجاج کے دوران خودسوزی کرنے والا ایک نوجوان بالآخر آج زخموں سے جانبر نہ ہوسکا۔ پولیس نے کہا کہ 26 سالہ مہا کالی سرینواس اقدام خودسوزی کے دوران بری طرح جھلس جانے کے بعد زیرعلاج تھا۔ ڈاکٹروں نے آج دوپہر اس کی موت کا اعلان کیا جس کے فوری بعد بی جے پی اور تلگو دیشم کے مقامی قائدین نے دھرنا منظم کرتے ہوئے متوفی کے خاندان کو معاوضہ ادا کرنے کا مطالبہ کیا۔ سرکاری اراضی کی فراہمی کے لئے ولیج ریوینیو آفیسرکی جانب سے مبینہ طور پر رشوت کی طلبی کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے سرینواس اور بالا پرشو راملو 26 سالہ نے 3 ستمبر کو مہاکندور کے ٹی آر ایس رکن راسمائی بالکشن کے دفتر کے روبرو اپنے جسم پر پٹرول چھڑک کر آگ لگایا تھا۔ پولیس نے کہا کہ سرکاری اسکیم کے تحت تقسیم کی جانے والی مفت اراضی کے استفادہ کنندگان کی فہرست میں ان (سرینواس اور پرشو راملو) کے نام شامل کرنے کیلئے ولیج ریوینیو آفیسر مبینہ طور پر رشوت طلب کیا تھا۔ افسر کے رویہ سے مایوس ہوکر شکایت کیلئے یہ دونوں راسمائی بالکشن کے دفتر پہونچے تھے لیکن وہ اس وقت اپنے دفتر میں موجود نہیں تھے جس پر دونوں نوجوان مزید برہم ہوگئے تھے اور اپنے جسم پر پٹرول چھڑک کر خود کو آگ لگایا تھا۔ سرینواس 60% اور پرشو راملو 40% جھلس گیا تھا۔ ڈاکٹرس ان دونوں کا علاج کررہے تھے۔ پرشو راملو صحتیاب ہوگیا ہے اور توقع ہے کہ دوشنبہ کو دواخانہ سے ڈسچارج کردیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT