Tuesday , January 16 2018
Home / عرب دنیا / اردن میں قتل کے 11مجرمین کو پھانسی دی گئی

اردن میں قتل کے 11مجرمین کو پھانسی دی گئی

عمان۔21ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام) اردن میں وزارت داخلہ نے کہا کہ قتل کے مجرم 11افراد کو آج پھانسی دیدی گئی ہیں۔ سزائے موت پر گذشتہ8سال سے عائد عبوری امتناع برخاست ہوگیا۔ وزارتی ترجمان کے حوالے سے سرکاری خبررساں ادارہ پٹرا نے کہا کہ ’’ قتل کے مختلف مقدمات میں مجرم قرار دیئے گئے11افراد کو آج طلوع کے ساتھ پھانسی دے دی گئی ۔ حکام نے کہا کہ یہ ت

عمان۔21ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام) اردن میں وزارت داخلہ نے کہا کہ قتل کے مجرم 11افراد کو آج پھانسی دیدی گئی ہیں۔ سزائے موت پر گذشتہ8سال سے عائد عبوری امتناع برخاست ہوگیا۔ وزارتی ترجمان کے حوالے سے سرکاری خبررساں ادارہ پٹرا نے کہا کہ ’’ قتل کے مختلف مقدمات میں مجرم قرار دیئے گئے11افراد کو آج طلوع کے ساتھ پھانسی دے دی گئی ۔ حکام نے کہا کہ یہ تمام افراد اردن کے شہری تھے جو 2005 اور 2006ء کے دوران قتل کے مختلف الزامات پر جرم کے مرتکب پائے گئے تھے ۔ اردن میں جون 2006ء کے دوران کسی مجرم کو آخری مرتبہ پھانسی دی گئی تھی اور اس کے بعد دے 122مجرمین کو دی گئی سزائے موت پر تعمیل نہیں ہوسکی تھی۔ وزیر داخلہ حسین جمالی نے حال ہی میں سزائے موت پر عائد عبوری امتناع کی برخاستگی کا اشارہ دیا تھا

اور کہا تھا کہ سزائے موت پر اردن میں سرگرم مباحث جاری ہیں اور عوام سمجھتے ہیں کہ سزائے موت پر امتناع بھی جرائم میں اضافہ کی ایک اہم وجہ ہے ۔ مشرق وسطیٰ کے کئی ممالک میں سنگین جرائم کے مرتکبین کو سزائے موت دینے کا رواج ہے ۔ اردن کے پڑوسی ملک سعودی عرب میں اس سال اب تک 83افراد کو دی گئی سزائے موت پر تعمیل کی گئی ۔ سعودی عرب سے بہت دور واقع ملک چین میں سزائے موت پر سب سے زیادہ تعداد میں تعمیل کرتے ہوئے گذشتہ سال ہزاروں افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا تھا جس کے بعد ایران ‘ سعودی عرب اور امریکہ میں جہاں کئی افراد کو برسرعام سرقلم کرتے ہوئے‘ پھانسی ‘مہلک انجکشن دیتے ہوئے یا گولی مارتے ہوئے سزائے موت پر تعمیل کی گئی تھی ۔

TOPPOPULARRECENT