Wednesday , November 22 2017
Home / شہر کی خبریں / ’ اردو ایکسپو ‘ اردو کی تاریخ ، شعراء کا تمثیلی مظاہرہ مسحور کن

’ اردو ایکسپو ‘ اردو کی تاریخ ، شعراء کا تمثیلی مظاہرہ مسحور کن

کمسنوں کی زبان سے اردو کی عظیم شخصیتوں کی عکاسی ، پدم شری ڈاکٹر مجتبیٰ حسین کا تاثر
حیدرآباد ۔ 25 ۔ نومبر : ( سیاست نیوز ) : پدم شری جناب مجتبیٰ حسین نے احاطہ سیاست کے محبوب حسین جگر ہال میں جاری اردو ایکسپو ’ اردو ہے جس کا نام ‘ کا مشاہدہ کرتے ہوئے اپنے تاثرات میں کہا کہ جس لگن و جستجو سے نئی نسل کے ننھے منے بچے اپنی مادری زبان اردو کو پیش کررہے ہیں اس سے اردو کی عظیم شخصیات کی روح کو بھی تسکین پہنچے گی کہ صدیوں بعد بھی اردو کی جس انداز سے پذیرائی کی جارہی ہے وہ نہ صرف لائق ستائش ہے بلکہ اس سے اردو کو نئی جہت ملے گی اردو کا مستقبل روشن نظر آئے گا ۔ اردو اپنے الگ رسم الخط کی وجہ کبھی نہ ختم ہونے والی زبان ہے ۔ اردو کے ذریعہ دنیا بھر کا سفر کرنے کا اعزاز انہیں حاصل ہوا ۔ اردو کی تاریخ ، شعراء کا تمثیلی مظاہرہ مسحور کن ہے ۔ تین دن سے جاری یہ نمائش اردو کا اہتمام سنٹرل پبلک ہائی اسکول خلوت نے ادارہ سیاست کے باہمی اشتراک سے کیا ہے اور ڈائرکٹر اسکول جناب ظفر اللہ فہیم نے مہمانان کا استقبال کیا ۔ جناب عابد صدیقی صدر ایم ڈی ایف نے اس کا مشاہدہ کرنے کے بعد اپنے تاثر میں اس کو متاثر کن بتایا اور کہا کہ اب اردو نئی نسل میں منتقل ہوچکی ہے اور اس کی عمر طویل ہے ۔ جناب ایس کے افضل الدین کانگریس لیڈر نے اردو کی اس منفرد نمائش کو جس طرح پیش کیا گیا اس کا اندازہ دیکھنے کے بعد ہی ہوتا ہے چنانچہ وہ اس کا دوبارہ مشاہدہ کررہے ہیں ۔ ڈاکٹر صبیحہ نسرین نے اردو کو سیکھنے کے شوق اور جذبہ پیدا کرنے میں یہ نمائش معاون ثابت ہوگی ۔ یم ڈی ایف کے عہدیداران جناب ایم اے قدیر ، محمد نصر اللہ خاں ، احمد صدیقی مکیش ، محمد واحد ، محمد احمد نے مشاہدہ کیا ۔ سماجی جہدکار حبیب حیات نے دو طلبہ کو ان کے متاثر کن مظاہرہ پر نقد رقمی انعام عطا کیا ۔ اردو پنڈت گورنمنٹ ٹیچرس اسوسی ایشن کے صدر نے اس کو مزید وسعت دے کر تمام سرکاری مدارس کے اساتذہ اور طلبہ کو اس کا مشاہدہ کرنے کی تجویز دی ۔ ادارہ سیاست کے اسٹاف ارکان مسرز مبشر الدین خرم ، نعیم وجاہت ، ریاض احمد ، مخدوم محی الدین ، محمد واجد ، ساجد علی ، کمپیوٹر سیکشن کے عملے نے اس کا مشاہدہ کرتے ہوئے تمام شرکاء کی ستائش کی ۔ جناب مصطفی علی سروری مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی نے ہر طالب علم کا انفرادی طور پر مشاہدہ کرتے ہوئے اردو میں جس انداز سے مرتب کرتے ہوئے پیش کیا اس کے لیے طلبہ کے ساتھ اساتذہ کو مبارکباد دی ۔ دکن پن اسٹور کے ذمہ داران کا ایک پانچ رکنی وفد نے ہر شعبہ کا تفصیلی مشاہدہ کیا ۔ ڈاکٹر معین الدین اختر ، محمد معید (ماسٹر مائنڈس اسکول ) ، منور علی مختصر ، خان اطہر ، جناب جاوید احمد ، ( جاوید مشن اسکول ) ، کوہ نور ہائی اسکول کے طلباء وطالبات کے علاوہ اضلاع محبوب نگر سے انور پاشاہ ، سلیم نواب ، محمد تقی حسن تقی ، مہاراشٹرا ، گجرات اور دیگر اردو کے محبان کی کثیر تعداد نے اس کا مشاہدہ کیا ۔ ایم اے حمید کوآرڈینٹر نے انتظامی امور کو بہ خوبی انجام دیا ۔ حمیدہ بیگم اور فریدہ ٹیچر نے اس کو ترتیب دیا ۔ آج نمائش کا آخری دن ہے ۔ اور اوقات 11 بجے تا 1 بجے رہیں گے ۔ اس نمائش اردو کا سینکڑوں کی تعداد میں افراد نے مشاہدہ کیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT