Wednesday , September 26 2018
Home / اضلاع کی خبریں / اردو میڈیم کالج کے مسائل کی عاجلانہ یکسوئی کا تیقن

اردو میڈیم کالج کے مسائل کی عاجلانہ یکسوئی کا تیقن

مدھول میں کالج کی سنگ بنیاد تقریب، رکن اسمبلی وٹھل ریڈی کا خطاب

مدھول میں کالج کی سنگ بنیاد تقریب، رکن اسمبلی وٹھل ریڈی کا خطاب
مد ہول /25جنوری(سیاست ڈسٹر کٹ نیوز ) ریاستی وزیر اعلی نے اپنے انتخابی منشور میں تلنگانہ کی ترقی کیلئے سب سے پہلے کے جی تا پی جی مفت تعلیم اور تعلیمی میعار کو بلند کر نے کیلئے ایک جا مع منصوبہ تیار کیا ہے جس کے تحت ما ڈل اسکولس کا قیام ہر منڈل میں ڈگری کالج قائم کر نے کا اعلا ن کیا ہے جس کو روبعمل لا نے کیلئے ریاستی حکو مت کو شاں ہیں ان خیالات کااظہار رکن اسمبلی حلقہ مدہول مسٹر جی وٹھل ریڈی نے گو رنمنٹ جو نیر کالج مدہول میں کالج عمارت کی سنگ بنیاد تقریب سے خطاب کر تے ہوئے کہا اسی دوران جناب شفیع اللہ خان عرف بابا چیر مین اولیاء طلبا ء کمیٹی کے ہمراہ جو نیر کالج کے طلباء وطالبات نے جی وٹھل ریڈی سے نمائندگی کر تے ہو ئے کہاکہ گذشتہ 6 سال سے مذکورہ کالج میںصرف د و لکچررکا م کر رہے ہیں جب کہ مزید اردو میڈیم بی پی سی کیلئے 4 اور ایچ ای سی کیلئے 3 لکچررس کی اشد ضرورت ہے اس کے علاوہ مستقر کالج میں پی ٹی کا پو سٹ بھی مخلوعہ ہیں جملہ اردو میڈیم کالج میں 7 لکچررس کی جائیدادیں مخلوعہ ہیں جس کی بنا پر طلباء کو کافی دشواریوں کا سا منا کر نا پڑ رہا ہے ارباب مجاز سے بار ہا نمائندگی کی گئی ہے لیکن اردو میڈیم کے ساتھ اتنا ہی سوتیلا سلوک کیا جارہا ہے جی وٹھل ریڈی سے طلباء نے سوال کیا کہ آخر ولکچرر کے بغیر کیسے تعلیمی سلسلہ کو جاری رکھ سکتے ہیں انہوں نے رکن اسمبلی سے اپیل کی کہ وہ ان کی مجبوری کو سمجھتے ہوئے جلد از جلد مطلو بہ لکچررس کی منظوری کو عمل میں لائیں جس پر رکن اسمبلی نے پورے وثوق کے ساتھ کہاکہ و ہر حال میں گور نمنٹ اردو میڈیم جو نیر کالج کیلئے اسا تذہ کا انتظام کر کے رہیں گے۔ ساتھ ہی جی وٹھل ریڈی نے اعلا ن کیا کہ مذکورہ بلڈنگ 65 لا کھ روپئے کی لا گت سے تعمیر کی جارہی ہے اس کے علاوہ طلباء کو فرنیچر کیلئے 5 لا کھ روپئے منظور کئے جائینگے دوران گفتگو قاضی صلاح الدین عارف نے ایم ایل اے سے کہاکہ جب وٹھل ریڈی اقتدار میں نہیں تھے تو دو لکچر بشمول کالج منظور کرو ائے اب جب کہ اقتدار پر ہیں پھر لکچرر س کے انتظام میں دیر کیوں ہورہی ہے جس پر رکن اسمبلی مدہول نے تیقن دیا کہ وہ ہر حال میں اردو میڈیم کے مسائل کو سنجیدہ لیتے ہوئے بعجلت حل کرینگے اس موقع پر سر پنج میجر گرام پنچایت مدہول بی انیل نے خطاب کر تے ہوئے کہاکہ مدہول میں ایک نہیں دو پرا ئیو ٹ ڈگری کالج چل رہے ہیں جب کہ گور نمنٹ کی جا نب سے ڈگری کالج نا گزیر ہے سا بقہ حکمرانوں نے پرا ئیو ٹ کالجوں کو سہولت پہنچا نے کیلئے گو ر نمنٹ کالج کو پسماندہ رکھا ضرورت اس بات کی ہے کہ فوراً مدہول کیلئے اردو اور تلگو دونوں میڈیموں سے ڈگری کالج کی منظوری حاصل کی جائے تا کہ طلباء مدہول مستقرہی پر اپنے تعلیمی سفر کو کا میا بی سے طئے کرسکے اس کے علاوہ لکشمی نر سا گوڑ نے بھی خطاب کیا اور کالج کے مسائل پر توجہ دینے کی ایم ایل اے سے گذارش کی اس موقع پر یو سف الدین پر نسپال جو نیر کالج مدہول ، سید آصف صدر ویلفر پارٹی بھینسہ ، ایم اے عزیز ، مقبول احمد حوالدار ، سید خالد مخدوم سابقہ ایم پی ٹی سی۔ مولا نا محمد سلیم الدین قاسمی ، صلا ح الدین عارف ، فہیم الدین شردا مینجمنٹ ڈگری کالج مدہول ، گورے میاں ، سید مختار الدین، کے علاوہ طلباء کی کثیر تعداد موجود تھی۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT