Saturday , November 18 2017
Home / ہندوستان / اردو کے شاعر نظیر اکبر آبادی کی یوم پیدائش آگرہ میں واقع مزار پر گلہائے عقیدت

اردو کے شاعر نظیر اکبر آبادی کی یوم پیدائش آگرہ میں واقع مزار پر گلہائے عقیدت

آگرہ ۔ 12 ۔ فروری : ( سیاست ڈاٹ کام ) : اردو کے ممتاز شاعر نظیر اکبر آبادی جنہوں نے ایک عام آدمی کی زندگی کو موضوع سخن بنایا تھا اور ہندوستانی تہواروں بالخصوص دیوالی اور عید پر متاثر کن نظمیں تحریر کی تھیں ۔ آج ان کی یوم پیدائش کے موقع پر خراج عقیدت پیش کیا گیا ۔ نظیر اکبر آبادی کا مقبرہ یہاں تاج محل کے قریب تاج گنج میں واقع ہے جو کہ سال بھر سنسان رہتا ہے ۔ لیکن یوم پیدائش کے موقع پر 18 ویں صدی کے عوامی شاعر کو گلہائے عقیدت پیش کرنے کے لیے ایک بڑی قطار لگائی جاتی ہے ۔ جہاں کا ماحول پھولوں کی خوشبو سے معطر ہوجاتا ہے ۔ آگرہ ڈیولپمنٹ اتھاریٹی نے مقبرہ کی حفاظت کے لیے ایک سائبان نصب کردیا ہے ۔ نظیر اکبر آبادی نے اپنی شاعری کے ذریعہ آگرہ کو ایک نئی شناخت عطا کی اور وہ مسلمانوں کے ساتھ ہندووؤں میں بھی مقبول تھے انہوں نے عید اور تہواروں کے علاوہ کبوتر بازی اور پتنگ بازی پر منفرد نظمیں لکھی تھیں ۔ جن کی یوم پیدائش کے موقع پر 1930 سے بسنت میلہ منعقد کیا جاتا ہے ۔ جس میں شعراء کرام نظیر کی نظمیں سناتے ہیں ۔ ان کی مشہور گیتوں میں سب ٹھاٹ پڑا رہ جائے گا ۔ جب لڑ چلے گا بنجارہ اور روٹی اور مفلسی شامل ہیں ۔ صدر برج منڈل ہیرٹیج کنزرویشن سوسائٹی سریندر شرما نے بتایا کہ مرزا غالب ، میر اور نظیر اردو ادب کے ستون تھے جن کا آگرہ سے بھی تعلق تھا ۔۔

TOPPOPULARRECENT