Saturday , November 25 2017
Home / شہر کی خبریں / اردو یونیورسٹی میں سیول سروسز پر لکچرس

اردو یونیورسٹی میں سیول سروسز پر لکچرس

تلمیذ احمد کا مشرقِ وسطیٰ پر خطاب، مزمل خان کا یو پی ایس پر اظہار خیال
حیدرآباد، 6؍ جون (پریس نوٹ) ماہر امورِ مشرقِ وسطیٰ جناب تلمیذ احمد، سابق سفیر برائے سعودی عرب، اومان اور متحدہ عرب امارات ’’مشرق وسطیٰ کا بحران اور ہندوستان کو درپیش چیلنجس‘‘ کے زیر عنوان 8؍ جون کو سیول سروسز ایگزامنیشن کوچنگ اکیڈیمی، مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی میں لکچر دیں گے۔ لکچر کا آغاز 11 بجے ہوگا۔پروفیسر عامر اللہ خان، ڈائرکٹر اکیڈیمی کے بموجب یہ لکچر سیول سروسز امیدواروں کے لیے منعقد کیے جانے والے لکچر کے سلسلے کی ایک کڑی ہے۔جناب تلمیذ احمد 1974 میں انڈین فارن سرویس سے منسلک ہوئے تھے۔ وہ گذشتہ 36 برسوں میں خلیجی ممالک اور جزیرہ نما عرب میں خدمات انجام دیتے رہے ہیں۔ انہوں نے اپنے کیریئر کے ابتداء میں کویت، بغداد، صنعا اور بعد میں قونصل جنرل جدہ (1987-90) میں خدمات انجام دیں۔ انہوں نے نیویارک، لندن اور پریٹوریامیں انڈین مشن میں بھی خدمات انجام دیں۔ جنوری 2000 میں انہیں سعودی عرب میں سفیر کے طور پر بھیجا گیااور جولائی 2003 میں وہ سلطنتِ اومان کے سفیر مقرر ہوئے۔ جنوری 2010 میں انہیں دوبارہ سعودی عرب میں سفیر بنایا گیا۔سیاستِ اسلام، مغربی ایشیا کی سیاست، اینرجی سیکوریٹی پر جناب تلمیذ احمد نے مسلسل لکھا اور لکچرس دیتے رہتے ہیں۔ ان کے اینرجی پر لکھے گئے مضامین کئی کتابوں اور جریدوں میں شائع ہوئے۔ ان کی کتاب ’’ریفارم ان دی عرب ورلڈ: ایکسٹرنل انفلوئنسس اینڈ ریجنل ڈیبیٹ‘‘ جولائی 2005 میں شائع ہوئی۔ ان کی تازہ تصنیف ’’چلڈرن آف ابراہم ایٹ وار: دی کلاش آف میسانک ملٹریزمس‘‘ ستمبر 2010 میں شائع ہوئی تھی۔ جولائی 2011 میں سعودی حکومت نے ہند – سعودی تعلقات کے فروغ میں ان کی خدمات پر فرسٹ کلاس کنگ عبدالعزیز میڈل عطا کیا۔جناب تلمیذ احمد کے خطاب سے قبل ریاست کے سیول سروسز ٹاپر جناب مزمل خان لکچر دیں گے۔ جناب مزمل خان کا کل ہند سطح پر 22 واں رینک تھا۔ حال ہی میں آزمائشی مدت کے اختتام کے بعد مزمل خان کا انڈین ریلویز میں افسر کے طور پر تقرر عمل میں آیا ہے۔ مزمل خان نے انجینئرنگ بٹس پلانی،  سے کیا تھا اور یو پی ایس سی مینس امتحانات میں انہوں نے مضمون بشریات کا انتخاب کیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT