Tuesday , December 12 2017
Home / ہندوستان / اروناچل پردیش میں حکومت سازی کی راہ ہموار

اروناچل پردیش میں حکومت سازی کی راہ ہموار

کانگریس کے 14 باغی ارکان کی نااہلیت پر گوہاٹی ہائیکورٹ کا حکم التوا برقرار
نئی دہلی ۔ 18 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) سپریم کورٹ نے آج اروناچل پردیش میں حکومت سازی کیلئے عملاً راہ ہموار کردی ہے۔ اس نے جوں کا توں موقف برقرار رکھنے اپنے احکام کوواپس لے لیا ہے۔ کانگریس کے 14 باغی ارکان اسمبلی کی نااہلیت پر گوہاٹی ہائیکورٹ احکام سے اظہار اطمینان کرتے ہوئے پانچ رکنی دستوری بنچ نے جس کی قیادت جے ایس کہر کررہے ہیں، 14 کانگریس ارکان اسمبلی کو نااہل قرار دینے کے تعلق سے ریکارڈس کا جائزہ لیا اور کہاکہ بادی النظر میں وہ ہائیکورٹ کے احکام سے مطمئن ہیں۔ بادی النظر میں ہم ہائیکورٹ کے احکام پر مداخلت نہیں کرتے۔ ہم اس عدالت کے فیصلہ سے خوش ہیں۔ اصل ریکارڈس کا جائزہ لیا ہے اور یہ ریکارڈس گوہاٹی ہائیکورٹ کے رجسٹرار جنرل کے پاس محفوظ ہے۔ اس سلسلہ میں 7 جنوری کو جاری کردہ آرڈر میں مداخلت نہیں کی جاتی۔ اس کے مطابق عبوری طور پر جاری کردہ احکام کو واپس لے لیا جاتا ہے۔ بنچ نے اس کیس کو جو 14 ارکان اسمبلی کی نااہلیت کے تعلق سے ہے، ایک رکنی بنچ سے نکل کر ہائیکورٹ کے ڈیویژن بنچ سے سماعت کی جائے گی۔ تاہم بنچ نے یہ بھی واضح کردیا کہ اس سلسلہ میں مزید کوئی کارروائی سے عدالت کے زیرالتواء کاموں میں مزید تاخیر ہوگی۔

TOPPOPULARRECENT