Saturday , January 20 2018
Home / Top Stories / اروند کجریوال ، نریندر مودی پر بھاری

اروند کجریوال ، نریندر مودی پر بھاری

دنیا کی 100 بااثر شخصیتوں میں دونوں قائدین سرفہرست : ٹائم میگزین l نریندر مودی کی مخالفت میں 50.3 فیصد ووٹ l اروند کجریوال کی تائید میں 71.5 فیصد ووٹ

دنیا کی 100 بااثر شخصیتوں میں دونوں قائدین سرفہرست : ٹائم میگزین
l نریندر مودی کی مخالفت میں 50.3 فیصد ووٹ l اروند کجریوال کی تائید میں 71.5 فیصد ووٹ

واشنگٹن ۔ 23 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ کے ٹائم میگزین کی جانب سے کروائے گئے سروے کے مطابق ہندوستان کے دو قائدین نریندر مودی اور اروند کجریوال کو دنیا کی 100 بااثر شخصیتوں میں سرفہرست قرار دیا گیا ہے۔ ان کے بعد امریکہ کے گلوکار کھیتے پیری کو تیسرا اور جسٹن بائبر کو چوتھا مقام ملا ہے۔ ساری دنیا میں 100 سب سے زیادہ بااثر افراد کے ٹائم میگزین پول پر کڑی نظر رکھتے ہوئے سروے کروایا گیا۔ چیف منسٹر گجرات نریندر مودی اور عام آدمی پارٹی سربراہ اروند کجریوال کے لئے علی الترتیب تقریباً 5 ملین اور 3 ملین ووٹ حاصل ہوئے۔ دیگر پول سروے میں بھی ان دونوں قائدین کو ووٹ حاصل ہوئے ہیں

لیکن بی جے پی کی وزارت عظمیٰ کے امیدوار کو اس پول میں شدید دھکا پہنچا ہے کیونکہ مودی کو ٹائم میگزین کی بااثر شخصیتوں میں شامل کرنے کیلئے حاصل کردہ اکثریتی رائے نے انہیں ’’نہیں‘‘ کے ووٹ دیئے ہیں۔ منگل کے دن عوام الناس میں کروائی گئی پولنگ کے بعد نریندر مودی کو 5,075,588 ردعمل ووٹ ملے یعنی 49.7 فیصد عوام نے انہیں میگزین میں شامل کرنے کیلئے ووٹ دیا جبکہ اس 100 بااثر شخصیتوں کی فہرست میں انہیں شامل نہ کرنے کیلئے 50.3 فیصد افراد نے ووٹ دیا۔ اروند کجریوال کو دوسرے اعلیٰ درجہ کے ردعمل ووٹ ملے ہیں۔ انہیں جملہ 3,168,308 حاصل ہوئے ان میں سے 71.5 فیصد رائے دہندوں نے کجریوال کو میگزین کی فہرست میں شامل کرنے کی حمایت کی جبکہ ان کے خلاف صرف 28.5 فیصد ووٹ ڈالے گئے۔ دیگر اہم ہندوستانی سیاستدانوں میں کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی بھی شامل ہیں جن کے حق میں صرف 96,070 ووٹ ملے۔ انہیں ٹائم کی فہرست سے خارج کرنے کیلئے 83.5 فیصد ووٹ ڈالے گئے۔ دنیا کے سب سے بااثر قائدین اور مقبول شخصیتوں کو بھی ہزاروں ووٹ حاصل ہوئے ہیں ان میں پوپ فرانسیس، بل گیٹس، ژی ژپنگ، کنگ جانگ ان، کرشٹن لگارڈے، انجیلامرکل، ولادیمیر پوٹن اور ایڈورڈ اسنوڈن شامل ہیں۔

نریندر مودی اور اروند کجریوال کے درمیان ووٹوں کی تعداد میں حیرت انگیز فرق پایا گیا ہے۔ ایک جانب تمام رائے دہندوں نے سوشل میڈیا پر زبردست رائے زنی کی تو دوسری جانب دونوں قائدین کے حامیوں اور ناقدین نے کھل کر ووٹ ڈالے۔ بعض افراد نے مودی کے خلاف ’’نہیں‘‘ کے ووٹ کا زیادہ استعمال کیا اور انہیں دنیا کا سب سے زیادہ ناپسندیدہ شخص بھی قرار دیا گیا۔ اس انتخابات میں مودی کو چاہنے والوں اور نفرت کرنے والوں کا بھی شمار زیادہ ہے۔ ٹائم میگزین نے اپنی سالانہ فہرست شائع کی ہے جس میں دنیا کی 100 بااثر شخصیتوں کے نام شامل کئے گئے ہیں۔ میگزین کے ایڈیٹرس نے ان 100 افراد کو ہی دنیا کے بااثر ترین شخصیتیں قرار دیاہے۔ اس سال کی فہرست 24 اپریل کو دستیاب ہوگی۔ میگزین نے بتایا کہ آن لائن ریڈرس سے ووٹ حاصل کئے گئے۔ اس میں سیاسی قائدین، تفریحی دنیا کی شخصیتیں، صنعتکاروں اور اسپورٹس سے وابستہ شخصیتوں کے نام بھی شامل تھے۔ تاہم عام آدمی پارٹی کے لیڈر اروند کجریوال نے ٹائم میگزین کے قارئین کے سرکردہ لیڈر بن گئے ہیں۔ ان کے حق میں ’’جی ہاں‘‘ کے سب سے زیادہ ووٹ ڈالے گئے۔ اس سے واضح ہوتا ہیکہ بی جے پی وزارت عظمیٰ کے امیدوار نریندر مودی کو ناپسند کرنے والوں کی تعداد زیادہ ہے۔

TOPPOPULARRECENT