اروند کجریوال کی گرفتاری محض ڈرامہ بازی : بی جے پی

عوامی ہمدردی حاصل کرنے کی ناکام کوشش: ضمانت حاصل نہ کرنے پر تنقید

عوامی ہمدردی حاصل کرنے کی ناکام کوشش: ضمانت حاصل نہ کرنے پر تنقید
نئی دہلی ۔ 22 مئی (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی نے عام آدمی پارٹی سربراہ اروند کجریوال پر الزام عائد کیا کہ انہوں نے عدالت میں 10,000 روپئے کے بانڈ پر دستخط نہ کرنے اور بعدازاں ان کی گرفتاری کے ذریعہ عوامی ہمدردی حاصل کرنے کا اچھا ڈرامہ کیا ہے۔ بی جے پی قائد پرکاش جواڈیکر نے کہا کہ یہ سوائے پبلسٹی اسٹنٹ کے اور کچھ نہیں جس سے کجریوال تحقیر عدالت کے مرتکب ہوئے ہیں۔ طریقہ یہ ہے کہ ایسا کوئی بھی شخص جسے سمن دے کر عدالت میں طلب کیا گیا ہو اور جس کے خلاف کوئی معاملہ زیرسماعت ہو، اسے ضمانت کے بانڈ پر دستخط کرنے کی ضرورت ہوتی ہے لیکن کجریوال نے ضمانت بانڈ پر دستخط کرنے سے انکار کردیا، جس سے یہ ظاہر ہوگیا کہ کجریوال اور عام آدمی پارٹی عدالت کا احترام نہیں کرتے۔ بی جے پی لیڈر نتن گڈکری کی جانب سے کجریوال کے خلاف ہتک عزت کا ایک کیس دائر کیا گیا تھا

جہاں کجریوال نے ضمانت بانڈ پر دستخط کرنے سے انکار کردیا تھا۔ کجریوال کو بعدازاں گرفتار کرکے تہاڑ جیل بھیج دیا گیا تھا۔ 28 فبروری کو ہی کجریوال کو عدالت نے فوجداری کے ایک معاملہ میں بذریعہ سمن طلب کیا تھا۔ کجریوال نے نتن گڈکری کو بدعنوان لیڈر کہا تھا جس کے بعد گڈکری نے بھی جوابی کارروائی کرتے ہوئے کجریوال کے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ دائر کردیا تھا۔ عام آدمی پارٹی نے آج ویب سائیٹ پر کچھ دستاویزات جاری کئے ہیں اور ادعا کیا کہ یہ نتن گڈکری کی بدعنوانیوں اور رشوت ستانی کا ثبوت ہیں۔

TOPPOPULARRECENT