Friday , December 15 2017
Home / Top Stories / ارون جیٹلی کی سرپرستی میں ڈی ڈی سی اے ’کرپشن کا گڑھ‘

ارون جیٹلی کی سرپرستی میں ڈی ڈی سی اے ’کرپشن کا گڑھ‘

13 سالہ میعاد کے دوران سنگین مالی بدعنوانیاں ، کروڑہا روپئے کا خرد برد : عام آدمی پارٹی
نئی دہلی ۔ 17 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیرفینانس ارون جیٹلی پر اپنے لفظی حملوں کو جاری رکھتے ہوئے عام آدمی پارٹی نے آج الزام عائد کرکے دہلی اینڈ ڈسٹرکٹ کرکٹ اسوسی ایشن (ڈی ڈی سی اے) میں ان کی سربراہی کی 13 سالہ میعاد کے دوران بڑے پیمانے پر مالی بدعنوانیاں ہوئی ہیں اور کہا کہ بڑی رقومات فرضی کمپنیوں کے ذریعہ ہتھیالی گئیں، اس کے علاوہ ٹیم سلیکشن میں دیگر بے قاعدگیاں پیش آئی ہیں۔ یہاں منعقدہ پریس کانفرنس میں عام آدمی پارٹی کے قائدین نے سنگین نوعیت دھوکہ دہی کی تحقیقات کرنے والے دفتر، ڈی ڈی سی اے کی داخلی تحقیقاتی کمیٹی اور حکومت دہلی کے مقررہ انکوائری پینل کی رپورٹس کے حوالے سے جیٹلی پر الزام لگایا کہ وہ کرکٹ کے اس ادارہ میں زبردست کرپشن میں راست یا بالواسطہ ملوث ہوئے ہیں یا اس طرح کی بدعنوانیاں ان کی علم و اطلاع سے پیش آئی ہیں۔ جیٹلی نے گذشتہ روز ان الزامات کو بکواس قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ وہ ایسے مبہم الزامات کا کوئی جواب نہیں دیں گے۔ عام آدمی پارٹی کے ترجمان راگھو چڈھا نے جن کے ساتھ متعدد دیگر قائدین موجود تھے، کہا کہ ڈی ڈی سی اے کے سربراہ کی حیثیت سے جیٹلی کی میعاد کے دوران ان کی راست یا بالواسطہ منظوری سے بدعنوانیاں ہوئی ہیں۔

وزیراعظم نریندر مودی کو ضرور جیٹلی سے استعفیٰ طلب کرلینا چاہئے تاکہ منصفانہ تحقیقات یقینی ہوجائے کیونکہ بعض مجاز تحقیقاتی ادارے وزارت فینانس کے تحت کام کرتے ہیں۔ اس طرح کے دھوکوں کی مثالیں پیش کرتے ہوئے عام آدمی پارٹی لیڈر نے الزام عائد کیا کہ فیروز شاہ کوٹلہ اسٹیڈیم کی تزئین نو کیلئے 90 کروڑ روپئے کے اضافہ اخراجات بتائے گئے جبکہ 24 کروڑ روپئے کا بجٹ منظور ہوا تھا اور اس معاملہ میں ڈی ڈی سی اے کے عہدیداروں نے فرضی کمپنیاں قائم کرتے ہوئے بڑی رقومات بٹور لیں۔ چڈھا نے دعویٰ کیا کہ پانچ کمپنیوں کو ادائیگیاں کی گئیں جن کے درج رجسٹر پتے وہی ہیں جو ایک ہی ڈائرکٹر کی سربراہی کے ساتھ درج کرائے گئے ہیں۔ فنڈس اور کمپنیوں کے معاملہ میں دھوکہ سے کام لیا گیا جنہیں ان کاموں کیلئے ادائیگی کی گئی جو ہوئے ہی نہیں۔ ان بے قاعدگیوں کو ’’کامن ویلتھ اسکام آف کرکٹ‘‘ قرار دیتے ہوئے عام آدمی پارٹی قائدین نے کہا کہ بی جے پی ایم پی اور سابق کرکٹرس کیرتی آزاد نے ان سنگین الزامات کی تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے اور کئی انکوائری کمیٹیوں نے ڈی ڈی سی اے میں فنڈس کے بڑے پیمانے پر بیجا تصرف کے ثبوت پائے ہیں۔
جیٹلی کیخلاف الزامات مسترد : ڈی ڈی سی اے
اس دوران دہلی اینڈ ڈسٹرکٹ کرکٹ اسوسی ایشن (ڈی ڈی سی اے) نے آج عام آدمی پارٹی کے وزیرفینانس اور اپنے سابق سربراہ ارون جیٹلی کے خلاف مالی بدعنوانیوں کے الزامات کی پرزور تردید کردی اور کہاکہ یہ الزامات بالکلیہ بے بنیاد ہیں اور اس میں کچھ بھی ٹھوس پن نہیں۔ مسلسل دوسرے روز ڈی ڈی سی اے کی مکمل اعلیٰ قیادت نے پریس کانفرنس سے خطاب کیا جہاں انہوں نے جیٹلی کے خلاف عام آدمی پارٹی کی جانب سے عائد کردہ الزامات کی نکتہ بہ نکتہ تردید کی۔ ڈی ڈی سی اے کے کارگذار صدر چیتن چوہان نے کہا کہ جیٹلی نے کرکٹ کی بہتری کیلئے کام کیا اور فیروزشاہ کوٹلہ اسٹیڈیم کو عالمی معیاری سنٹر میں تبدیل کیااور انہیں تنازعہ میں گھسیٹنا نامناسب ہے۔

TOPPOPULARRECENT