Tuesday , October 23 2018
Home / شہر کی خبریں / ارکان پارلیمنٹ و اسمبلی کیخلاف زیرالتواء مقدمات کی یکسوئی کیلئے حیدرآباد میں خصوصی عدالت

ارکان پارلیمنٹ و اسمبلی کیخلاف زیرالتواء مقدمات کی یکسوئی کیلئے حیدرآباد میں خصوصی عدالت

اکبر اویسی کا اشتعال انگیز تقریر کا مقدمہ منتقل، دیگر مقدمات کی بھی یکسوئی کے اقدامات

حیدرآباد 12 مارچ (سیاست نیوز) ارکان پارلیمنٹ اور ارکان اسمبلی کے خلاف زیرالتواء مقدمات کی فی الفور سماعت کے لئے سپریم کورٹ کی جانب سے تمام ریاستوں میں خصوصی عدالتیں قائم کرنے کے احکامات کے پیش نظر حیدرآباد میں بھی خصوصی عدالت قائم کی گئی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ نامپلی میٹرو پولیٹن کریمنل کورٹ کے احاطہ میں خصوصی عدالت کا قیام عمل میں لایا گیا جس میں مجلسی رکن اسمبلی اکبرالدین اویسی کی نرمل اشتعال انگیز تقریر کیس کو اس عدالت میں منتقل کردیا گیا ہے۔ سیکنڈ ایڈیشنل میٹرو پولیٹن سیشن جج کی عدالت کو خصوصی عدالت برائے مقدمات ارکان پارلیمنٹ، ارکان اسمبلی مقرر کئے جانے کے بعد اکبرالدین اویسی کا پہلا کیس بتایا گیا۔ ریاست کی سی آئی ڈی پولیس کی جانب سے اکبرالدین اویسی کے خلاف نفرت انگیز تقریر کا مقدمہ 14 ویں ایڈیشنل چیف میٹرو پولیٹن مجسٹریٹ جو فرقہ وارانہ نوعیت کے مقدمات کی خصوصی عدالت ہے میں چلایا جارہا تھا لیکن حالیہ دنوں سپریم کورٹ کی جانب سے ملک بھر کے تمام ارکان پارلیمنٹ و ارکان اسمبلی و دیگر عوامی نمائندوں کے خلاف زیرالتواء مقدمات کی فوری سماعت کے لئے خصوصی عدالتیں (اسپیشل کورٹس) قائم کرنے کے احکامات جاری کئے گئے تھے جس کے پیش نظر شہر حیدرآباد میں بھی ایک خصوصی عدالت قائم کی گئی۔ اس عدالت نے ریاست سے تعلق رکھنے والے ارکان پارلیمنٹ اور ارکان اسمبلی کے خلاف درج کئے گئے مقدمات کی سماعت کی جائے گی۔ واضح رہے کہ 22 ڈسمبر 2012 ء کو ضلع عادل آباد کے نرمل ٹاؤن میں مجلسی رکن اسمبلی اکبرالدین اویسی نے مبینہ نفرت انگیز تقریر کی تھی جس پر پولیس نے ازخود کارروائی کرتے ہوئے نرمل ٹاؤن پولیس اسٹیشن میں مقدمہ درج کرتے ہوئے اُنھیں گرفتار کرکے جیل منتقل کردیا تھا۔ اکبرالدین اویسی کے خلاف سخت دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا تھا اور بعدازاں اس کیس کی تحقیقات کو سی آئی ڈی پولیس کے حوالے کردیا گیا جس نے رکن اسمبلی کی تقریر کے دوران ریکارڈ کی گئی آواز کے نمونے فارنسک لیباریٹری کو روانہ کرتے ہوئے اس سلسلہ میں رپورٹ حاصل کی تھی بعدازاں اُن کے خلاف چارج شیٹ بھی داخل کی گئی تھی۔ مجلسی رکن اسمبلی کے خلاف درج کئے گئے مقدمہ میں فرقہ وارانہ نوعیت کی دفعہ شامل ہونے کے نتیجہ میں اس کیس کی سماعت 14 ویں ایڈیشنل میٹرو پولیٹن مجسٹریٹ کو منتقل کی گئی تھی۔ بتایا جاتا ہے کہ مجلسی رکن اسمبلی کے مقدمہ کی سماعت فی الفور کی جائے گی اور آئندہ دنوں ریاست کے مختلف ارکان پارلیمنٹ اور ارکان اسمبلی کے خلاف درج کئے گئے مقدمات کو بھی اس عدالت کو منتقل کردیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT