Friday , November 24 2017
Home / ہندوستان / اساتذہ کی قیامگاہوں میں قصور وار طلباء روپوش

اساتذہ کی قیامگاہوں میں قصور وار طلباء روپوش

جے این یو اسٹوڈنٹس یونین کے جوائنٹ سکریٹری کا الزام
نئی دہلی ۔ 22 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) اکھل بھارتیہ ودیارتھی پریشد کے ارکان نے آج یہ الزام عائد کیا کہ بغاوت کیس میں پولیس کو مطلوب 5 طلباء جوکہ گذشتہ 10 یوم سے لاپتہ ہونے کے بعد آج کیمپس میں نمودار ہوئے ہیں جے این یو پروفیسرس کی قیامگاہوں میں روپوش ہوگئے تھے اور یہ مطالبہ کیا کہ اس معاملہ کی تحقیقات کروائی جائے۔ جوائنٹ سکریٹری جے این یو اسٹوڈنٹس یونین سوروب کمار شرما نے کیا۔ ہمارا یہ گمان ہیکہ ملزم طلباء کیمپس میں پروفیسرس کی قیامگاہوں میں روپوش تھے لہٰذا اس معاملہ کی تحقیقات کروائی جائے اور جن اساتذہ نے قصوروار طلباء کی تائید کی ہے یونیورسٹی حکام ان کے خلاف تادیبی کارروائی کرے۔ اے بی وی پی لیڈر نے کہا کہ کل شب یہ طلباء اچانک کیمپس میں نمودار ہوگئے اور فخریہ انداز میں ریالیوں کو بھی مخاطب کیا جبکہ طلباء اور اساتذہ کی کثیرتعداد نے ان کی ستائش کی۔ انہوں نے وائس چانسلر سے مطالبہ کیا کہ اس معاملہ میں مداخلت کرتے ہوئے ان طلباء کو خودسپردگی کی ہدایت دی۔ جے این یو کے 5 طلباء بشمول عمر خالد جن کی غداری کے کیس میں پولیس کو تلاش ہے کل کیمپس میں دیکھے گئے اور یہ ادعا کیا کہ ہم نے کوئی غلط کام نہیں کیا ہے لیکن ایک بناوٹی ویڈیو استعمال کرتے ہوئے انہیں کیس میں پھنسایا گیا۔

TOPPOPULARRECENT