Monday , December 11 2017
Home / شہر کی خبریں / اساتذہ کی10ہزارجائیدادوں پر عنقریب تقررات

اساتذہ کی10ہزارجائیدادوں پر عنقریب تقررات

نئے اضلاع کی اساس پر قطعیت‘ زائد جائیدادوں کیلئے محکمہ فینانس سے منظوری کیلئے موثر نمائندگی
حیدرآباد ۔ 16اکٹوبر ( سیاست نیوز) تلنگانہ میں بہت جلد زائد از دس ہزار اساتذہ کی جائیدادوں پر تقررات عمل میں لائے جائیں گے اور نئے اضلاع کی اساس پر مخلوعہ جائیدادوں کو قطعیت دے دی گئی ہے ۔ تمام ڈسٹرکٹ ایجوکیشنل آفیسرس نے31اضلاع کے لحاظ سے مخلوعہ جائیدادوں کی نشاندہی کی ۔ اس طرح مخصوص طبقہ کیلئے مختص کردہ مخلوعہ جائیدادوں ( بیاک لاگ جائیدادوں) کو ملاکر اور آئندہ ایک سال کے دوران وظیفہ پر سبکدوش ہونے والے اساتذہ کے باعث مخلوعہ ہونے والی تقریباً دو ہزار اساتذہ کی جائیدادوں کو بھی پُر کردینے پر حکومت سنجیدگی کے ساتھ غور کررہی ہے ۔ اس سلسلہ میں ڈسٹرکٹ ایجوکیشنل آفیسرس اساتذہ کی مخلوعہ جائیدادوں کی تازہ ترین تعداد سے ریاستی محکمہ تعلیم کو واقف کرواچکے ہیں ۔ باوثوق سرکاری ذرائع نے یہ بات بتائی اور کہا کہ محکمہ فینانس نے اب تک ہی 8792 جائیدادوں پر تقررات کیلئے باقاعدہ طور پر منظوری دے دی ہے ۔ اس کے علاوہ زائد مخلوعہ جائیدادوں پر تقررات کیلئے محکمہ فینانس سے منظوری حاصل کرنے کیلئے بھی موثر نمائندگی کی جائے گی ۔ بتایا جاتا ہیکہ ٹیچرس رکروٹمنٹ ٹسٹ ( آئی ۔ ٹی ) منعقد کئے جانے تک پلیمنٹری نوٹیفکیشن کے ذریعہ اُن زائد مخلوعہ جائیدادوں کو پُر کرنے کی قوی امید پائی جاتی ہے ۔ محکمہ تعلیمات کے باوثوق ذرائع کے مطابق بتایا جاتا ہیکہ ضلع واری اساس پر اسکول اسسٹنٹ ‘ سیکنڈری گریڈ ‘ ٹیچرس پنڈت جائیدادوں کو ملاکر جملہ تعداد کا اندازہ لگایا گیا ہے لیکن محکمہ تعلیم کے اعلیٰ عہدیدار مخلوعہ جائیدادوں کی تفصیلات سے واقف کروانے سے عملاً گریز کررہے ہیں ۔ تاہم اضلاع سے اساتذہ کی مخلوعہ جائیدادوں سے متعلق اکٹھا کردہ اعداد و شمار کی روشنی میں اضلاع عادل آباد میں 293 ‘ نرمل میں 236 ‘ منچریال میں 169 ‘ کمرم بھیم 1018 ‘ نظام آباد میں 156 ‘ کاماریڈی میں 380 ‘ جگتیال میں 253 ‘ پداپلی میں 54 ‘ کریم نگر میں 71 ‘ سرسلہ میں 108 ‘ ورنگل اربن میں 143 ‘ ورنگل رورل میں 123 ‘ جنگاؤں میں 168 ‘ محبوب آباد میں 135 ‘ جیاشنکر بھوپال پلی میں 380 ‘ کھمم میں 57 ‘ کتہ گوڑم میں 100 ‘ نلگنڈہ میں 408 ‘ سوریا پیٹ 300 ‘ یادادری میں 339 ‘ رنگاریڈی میں 600 ‘ وقارآباد میں 826 ‘ میڑچل میں 200 ‘ میدک میں 297 ‘ سدی پیٹ میں 155 ‘ سنگاریڈی میں 1105 ‘ محبوب نگر میں 725 ‘ ناگرکرنول میں 436 ‘ گدوال میں 387‘ ونپرتی میں 154 اور حیدرآباد 200 جائیدادیں مخلوعہ بتائی جاتی ہیں ۔

 

TOPPOPULARRECENT