Sunday , April 22 2018
Home / شہر کی خبریں / اساتذہ کے تقررات میں ناانصافی ، محفوظ زمرہ کی نشستیں دیگر زمروں میں تقسیم

اساتذہ کے تقررات میں ناانصافی ، محفوظ زمرہ کی نشستیں دیگر زمروں میں تقسیم

مسلم اہل امیدوار کو نقصان ، انصاف رسانی کے لیے ٹرینڈ اساتذہ کی جناب عامر علی خاں سے نمائندگی
حیدرآباد ۔ 9 ۔ اپریل : ( سیاست نیوز ) : تلنگانہ میں اردو میڈیم ٹیچرس ایس جی ٹی ( سکنڈری گریڈ ) کے 636 پوسٹ پر تقررات کے لیے جو ٹی ایس پی ایس سی تلنگانہ پبلک سرویس کمیشن کے تحت ٹی آر ٹی ٹیچرس رکروٹمنٹ ٹسٹ ہوا اور اعلامیہ میں ان مخلوعہ جائیدادوں کی تقسیم جو کی گئی اس میں ایس سی / ایس ٹی تحفظات زمرہ کے لیے اور بی سی اے ، سی ڈی زمرہ کے لیے 324 نشستیں مختص کردی گئی جب کہ ان چھ زمرہ جات میں نہ ہی کوئی مسلم امیدوار آتے ہیں اور نہ ہی کوئی اردو والا آتا ہے ۔ عام زمرہ میں 200 ، بی سی بی زمرہ میں 47 اور بی سی ای زمرہ میں 14 جملہ 277 نشستیں ایسے ہیں جس کے دعویدار مسلم اور اردو داں امیدوار ہوتے ہیں ۔ اردو کے ٹرینڈ ٹیچرس کے ساتھ یہ سراسر نا انصافی ہے کہ 324 محفوظ نشستوں میں کوئی اردو والا اہل نہیں ہوتا چنانچہ اس ضمن میں حکومت کو توجہ دلانے تلنگانہ اسٹیٹ اردو ٹرینڈ ٹیچرس اسوسی ایشن کی مختلف سطحوں پر نمائندگیوں کے لیے جناب عامر علی خاں نیوز ایڈیٹر سیاست سے تحریری نمائندگی کرتے ہوئے تمام اعداد و شمار اور جدول پیش کیا جس میں تحفظات زمرہ میں اردو کے پوسٹ رکھنے سے بہت بڑا نقصان ہوگا ۔ اس وفد میں اسوسی ایشن کے عہدیدار شیخ شہید علی حسرت ، محمد جنید ، محمد رفیق ، سید خالد ، عبدالقادر ، مقتدر ، منیر ، محمد علی ، فردوس بیگم ، تہمینہ ، کنیز ، ہاجرہ شامل تھے ۔ تلنگانہ کے قیام کے بعد اب تک ڈی ایس سی نہیں ہوا ۔ وفد نے بتلایا کہ اردو ٹرینڈ ٹیچرس جنہوں نے ڈی ایڈ ، بی ایڈ ، یو پی ٹی کے لیے ایک عرصہ سے ٹیچرس کے تقررات کے لیے ڈی ایس سی کے منتظر تھے ٹیٹ بھی ہر سال نہیں ہورہا ہے ۔ ڈی ایس سی کئی سال سے ایک بار بھی نہیں ہوا ۔ حکومت ، چیف منسٹر ، وزیر تعلیم ، ڈپٹی چیف منسٹر محمود علی اس ضمن میں فوری احکامات جاری کرتے ہوئے ایس سی / ایس ٹی دیگر بی سی زمرہ کے اردو ٹیچرس پوسٹ تحفظات کو عام زمرہ میں تبدیل کرتے ہوئے تقررات کو یقینی بنائیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT