Saturday , January 20 2018
Home / دنیا / اسامہ نے میرے ذریعے دنیا کو پیغام دینا چاہا :ابوغیث

اسامہ نے میرے ذریعے دنیا کو پیغام دینا چاہا :ابوغیث

نیویارک ، 20 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ میں استغاثہ کے وکلا نے کہا ہے کہ 9/11 کے بعد القاعدہ کے ترجمان نے نیو یارک میں ایک مقدمے کے دوران عدالت کو بیان دیا ہے کہ اسامہ بن لادن ان کے ذریعے دنیا کو پیغام دینا چاہتا تھا۔ سلیمان ابو غیث نے یہ بات نیویارک میں دہشت گردی کے مقدمے کے دوران اپنا دفاع کرتے ہوئے کہی۔ انھوں اس جرم کا اعتراف نہیں کیا

نیویارک ، 20 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ میں استغاثہ کے وکلا نے کہا ہے کہ 9/11 کے بعد القاعدہ کے ترجمان نے نیو یارک میں ایک مقدمے کے دوران عدالت کو بیان دیا ہے کہ اسامہ بن لادن ان کے ذریعے دنیا کو پیغام دینا چاہتا تھا۔ سلیمان ابو غیث نے یہ بات نیویارک میں دہشت گردی کے مقدمے کے دوران اپنا دفاع کرتے ہوئے کہی۔ انھوں اس جرم کا اعتراف نہیں کیا کہ انھوں نے امریکی شہریوں کو ہلاک کرنے کی سازش کی۔

سلیمان کے وکلا کا کہنا ہے کہ انھیں پہلے سے ان حملوں کا علم نہیں تھا۔ مقدمے کی سماعت کے دوران کویت سے تعلق رکھنے والے اسلامی مبلغ سلیمان نے کہا کہ وہ 2001ء میں افغانستان پہنچے کیونکہ انھیں وہاں پر قائم نئی اسلامی حکومت کے بارے میں جاننے کی بہت خواہش تھی ۔ اس وقت افغانستان میں طالبان ملیشیا کی حکومت تھی۔ ایک ترجمان کے ذریعے بات کرتے ہوئے سلیمان نے عدالت کو اپنے بیان میں بتایا کہ 11 ستمبر 2001ء کی رات اسامہ بن لادن نے ایک پہاڑی علاقے میں ملاقات کیلئے ان کے پیچھے اپنا ایک مددگار بھیجا۔ انھوں نے اسامہ بن لادن کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ میں جاننا چاہتا تھا کہ اس کے پاس کیا ہے اور وہ کیا چاہتا ہے۔ سلیمان بعد میں اسامہ بن لادن کا داماد بنا۔ سلیمان نے اپنے عدالتی بیان میں کہا کہ جب ان کی ملاقات ہوئی تو اسامہ بن لادن نے ان سے کہا کہ آپ کو معلوم ہے کہ کیا ہوا ؟ ہم نے یہ کام کیا ہے۔ اسامہ نے سلیمان سے پوچھا کہ اب کیا ہوگا۔

TOPPOPULARRECENT